چیف جسٹس آف پاکستان افتخار محمد چوہدری لاہور پہنچ گئے

لاہور۔ چیف جسٹس آف پاکستان افتخار محمد چوہدری لاہور پہنچ گئے۔ علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر بڑی تعداد میں وکلاء اور سیاسی کارکنوں نے ان کا پرتپاک استقبال کیا اور شدید نعرے بازی کی۔ ایک نجی ٹی وی چینل کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس افتخار محمد چوہدری جمعہ کی شام پی آئی اے کی فلائٹ پی کے ٣٨١ کے ذریعے لاہور پہنچے۔ اس موقع پر لاہور ایئر پورٹ پر چیف جسٹس کا استقبال کرنے کیلئے وکلاء کی بڑی تعداد موجود تھی۔ جبکہ پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق وزیر اطلاعات خالد کھر بھی موجود تھے۔ اس موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ چیف جسٹس رات لاہور میں قیام کے بعد آج ہفتے کی صبح ٦ بجے ملتان روانہ ہوں گے اور اوکاڑہ، ساہیوال اور خانیوال میں ان کا استقبال کیا جائیگا۔

—————–
اپ ڈیٹ

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس افتخار محمد چوہدری لاہور ایئر پورٹ سے جی ۔ او ۔ آر ون کا 15منٹ کا سفر سوا تین گھنٹوں میں 300سے زائد گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کے قافلے میں طے کر کے ججز ہاؤس پہنچے ۔ ایئر پورٹ سے لیکر تمام راستے وکلاء ،سیاسی کارکن ،سماجی تنظیموں اور عوام کی بڑی تعداد نے انکا بھر پور استقبال کیا ۔چیف جسٹس کی گاڑی پاکستان بار کونسل کے ممبر کاظم خاں چلا رہے تھے ۔جب چیف جسٹس کا قافلہ ایئر پورٹ کے قریبی علاقہ آدھا پنڈکے قریب پہنچا تو وہاں کے رہائشی رات کے اندھیرے میں سڑک پر آگئے اور چیف جسٹس کی گاڑی کے آگے بھنگڑے ڈالتے اور چیف جسٹس زندہ باد کے نعرے لگاتے رہے ۔ کینٹ کے علاقہ میں شہریوں کی بڑی تعداد نے چیف جسٹس کا استقبال کیا ۔ گزشتہ روز چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری جب 8بجکر 30منٹ پر ایئر پورٹ سے جی ۔ او ۔ آر کیلئے روانہ ہوئے تو 300 کے قریب گاڑیاں اور موٹر سائیکلیں بھی چیف جسٹس کے قافلے میں شریک ہوگئیں ۔ آدھا پنڈ کے رہائشیوں کو جب معلوم ہوا کہ چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کا قافلہ آرہا ہے تو وہ رات کے اندھیرے کے باوجود گاؤں کی بڑی تعداد جن میں مرد خواتین شامل تھے استقبال کیلئے سڑک پر آگئے اور چیف جسٹس کی گاڑی کی آگے بھنگڑا ڈالتے اور زندہ باد کے نعرلے لگاتے رہے ۔ چیف جسٹس کے قافلے نے ایئر پورٹ سے برکی سٹاپ کا پانچ منٹ کا فاصلہ ایک گھنٹے میں طے کیا ۔ کینٹ کے علاقہ میں پہنچنے پر برکت مارکیٹ اور فوٹریس اسٹیڈیم کے باہر عوام اور سیاسی کارکنوں کی بڑی تعداد نے انکا استقبال کیا اور چیف جسٹس کی گاڑی کے آگے چلتے رہے اور انکے حق میں نعرے بازی کرتے رہے ۔ وکلاء نے سارے راستے حکومت کے خلاف بھی شدید نعرے بازی کی ۔ چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری 11بجکر 15منٹ پر جی ۔ او ۔ آر ون میں واقع ججز ریسٹ ہاؤس میں پہنچے جہاں پر پولیس نے سیکورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے ہوئے تھے وکلاء کے علاوہ کسی کو بھی ججز ہاؤس کے اندر جانے کی اجازت نہیں تھی ۔ اس موقع پر بھی وکلاء نے ججز ہاؤس کے باہر سڑک پر چیف جسٹس کے حق اور حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی بھی کی ۔

Share

Leave a Reply