تمام اداروں کی تباہی کے بعد فوجی حکمران اور ان کے حلیف عدلیہ پر حملہ آور ہو رہے ہیں ۔قاضی حسین احمد

٭۔ ۔ ۔ بے نطیر بھٹو امریکی و فوجی حمایت سے پاکستان آئیں تو پرویز مشرف کی صف میں شامل ہو جائیں گی

٭۔ ۔ ۔ نواز شریف کی جلا وطنی آئین و قانون کے خلاف اور عدالت عظمی کے فیصلے کی توہین ہے۔

لاہور(ثناء نیوز )متحدہ مجلس عمل کے صدر و امیر جماعت اسلامی پاکستان قاضی حسین احمد نے کہا ہے کہ تمام اداروں کی تباہی کے بعد فوجی حکمران اور ان کے حلیف عدلیہ پر حملہ آور ہو رہے ہیں ۔ غنڈہ گردی سے بنیادی انسانی حقوق پامال کئے جارہے ہیں ۔ غیر ملکی مداخلت سے قومی سلامی خطرے میں ہے ۔ آزادی و خود مختاری گروی رکھ دی گئی ہے ۔ پرویز مشرف قومی مجرم ہیں ۔ اے پی ڈی ایم بڑے پیمانے پر تحریک چلا کر 10 ستمبر کی کوتاہی کا ازالہ کرے گی ۔ بے نطیر بھٹو امریکی و فوجی حمایت سے پاکستان آئیں تو پرویز مشرف کی صف میں شامل ہو جائیں گی ۔ قوم اس اتحاد کو قبول نہیں کر ے گی ۔ انہیں اپنے رویے پر نظرثانی کر کے فوجی آمر کے مقابلے میں قوم کا ساتھ دینا چاہیے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایک غیر ملکی نشریاتی ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔قاضی حسین احمد نے کہا کہ نواز شریف کی جلا وطنی آئین و قانون کے خلاف اور عدالت عظمی کے فیصلے کی توہین ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومتی سطح پر توہین عدالت تشویناک ہے ۔ عدلیہ کے فیصلوں پر اثر انداز ہونے اور آزادانہ فیصلوں سے روکنے کے لئے حکومتی پشتیبانی میں عدالتوں پر حملے ہو رہے ہیں ۔ وکلا کو قتل کیا جا رہا ہے ۔ خفیہ ایجنسیاں حکومت مخالف وکلااغوا کر کے تشدد کا نشانہ بنا رہی ہیں ۔ بندوق کے زور پر بنیادی انسانی حقوق پامال اور وکلاء ، صحافیوں ، سول برادری اور عوام کو ہراساں کرنے کی کوشش کی جار ہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتیں اور پولیٹیکل ورکر حکومتی ہتھکنڈوں کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم کراچی اور پشاور میں وکلاء کو تشدد کا نشانہ بنانے کی مذمت کرتے ہیں ۔ قاضی حسین احمد نے کہا کہ پرویز مشرف نے 2000 ء میں نواز شریف کو جلا وطن کر کے پاکستانی قانون کی خلاف ورزی کی اب دوسری بار ملک بدر کر کے انہوں نے ملکی قانون اور عدلیہ کے فیصلے کا مذاق اڑایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جنگل کے قانون سے بڑی برائی اپنے شہری کو کسی اور ملک کے حوالے کرنا ہے ۔ نواز شریف کے خود جلا وطنی اختیار کرنے کا حکومتی پروپیگنڈہ جھوٹا ہے ۔ شواہد بتاتے ہیں کہ انہیں زبردستی جلا وطن کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ پرویز مشرف نے سارے کھیل کی پلاننگ کی اورسعودی عرب کو مداحلت اور نواز شریف کو اپنے ہاں رکھنے پر مجبور کیا ۔ انہوں نے کہا کہ 16 ستمبرکو اے پی ڈی ایم کے اجلاس میں ؤئندہ کی حکمت عملی تیار کی جائے گیاور تمام جماعتیںبڑے پیمانے پر تحریک چلا کر 10 ستمبر کو کوتاہی کا ازالہ کریںگی ۔ ایک سوال کے جواب میں قاضی حسین احمد نے کہا کہ چیف آف آرمی سٹاف کی حکومت کی صورت میں ملک پر مارشل لاء مسلط ہے ۔ پرویز مشرف تمام امور کے ذمہ دار ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ فرد واحد کے بجائے ملک پر آئین و قانون کی حکمرانی ہوتی تو امریکہ سمیت کسی ملک کو پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کی جرات نہ ہوتی ۔ انہوں نے کہا کہ عملا ملک پر امریکی حکمرانی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب نے نواز شریف کو لے جانے کے لوے فوج اور پولیس نے بھیجی تھی ۔ پرویز مشرف نے دباؤ ڈال کر سعودی عرب حکومت کو اس معاملے میں شریک کیا ۔ ایک اور سوال کے جواب میں قاضی حسین احمد نے کہا کہ بے نظیر بھٹو امریکی و فوجی حمایت سے پاکستان آئیں تو مشرف کی صف میں شامل ہو جائیں گی اس سے انہیں کوئی نیک نامی نہیں ملے گی ۔ قوم اس اتحاد کو قبول نہیں کرے گی ۔ انہوں نے بے نظیر بھٹو کو مشورہ دی کہ وہ اپوزیشن کے ساتھ آکر جمہوری جدوجہد میں شامل ہو جائیں ۔

Share

Leave a Reply