Urdu News

Urdu News…The 3rd Largest Online Urdu Newspaper

Urdu News header image 4

Entries from October 2nd, 2007

حکومت کا بینظیر بھٹو کیخلاف تمام مقدمات واپس لینے کا فیصلہ

October 2nd, 2007 · No Comments · پاکستان

اس حوالے سے مجوزہ آرڈیننس کا مسودہ پیپلز پارٹی کے حوالے کر دیا گیا

تیسری بار وزیراعظم بننے سے تحفظات برقرار ہیں، بینظیر بھٹو 58 ٹو بی کا خاتمہ اور مقدمات کی واپسی چاہتی ہیں، شیخ رشید احمد کی نجی ٹی وی چینل گفتگو

اسلام آباد ۔ حکومت نے پاکستان پیپلز پارٹی کی چیئر پرسن اور سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کیخلاف تمام مقدمات واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے اور اس حوالے سے مجوزہ آرڈیننس کا مسودہ پیپلز پارٹی کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ ایک نجی ٹی وی چینل کے مطابق منگل کے روز وزیراعظم ہاؤس میں وزیراعظم شوکت عزیز کی زیر صدارت اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا جس میں بینظیر بھٹو کیخلاف تمام مقدمات واپس لینے پر اتفاق کیا گیا جبکہ حکومت نے بینظیر بھٹو کے خلاف تمام مقدمات ختم کرنے کیلئے ایک مجوزہ آرڈیننس تیار کیا ہے۔ جس کا مسودہ پیپلز پارٹی کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ آرڈیننس میں کیسز کے ختم کرنے کے حوالے سے لائحہ عمل بیان کیا گیا ہے ذرائع کے مطابق پیپلز پارتی کے قانونی اور آئینی ماہر سنیٹر فاروق نائیکم اس کا مطالعہ کریں گے۔ وزیراعظم ہاؤس میں وزیر اعظم شوکت عزیز کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں بینظیر بھٹو کیخلاف مقدمات واپس لینے کے حواے سے جو اتفاق رائے ہوا ہے اس میں 90 فیصد شرکاء کی یہ رائے تھی کہ بینظیر بھٹو کیخلاف کیسز ختم کئے جائیں اور انہیں وطن واپس آنے کی اجازت دی جائے۔ دریں اثناء ایک نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کے دوران وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے بتایا کہ وزیراعظم شوکت عزیز کی زیر صدارت اہم اجلاس ہوا، جس میں صدارتی انتخابات، سابق وزیراعظم کیخلاف مقدمات کی واپسی اور دیگر اہم امور پر غور کیا گیا۔ شیخ رشید احمد نے مزید کہا کہ وفاقی کابینہ بینظیر بھٹو کیخلاف مقدمات کی واپسی پر متفق ہو گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تیسری بار وزیراعظم بننے پر تحفظات برقرار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بینظیر 58ٹو بی کا خاتمہ اور مقدمات کی واپسی چاہتی ہیں۔ صدر جنرل پرویز مشرف کی وردی سے متعلق پوچھے گئے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ وردی سے متعلق فیصلہ کیا جا چکا ہے۔ بعض ذرائع کا کہنا تھا کہ قبل ازیں پاکستان پیپلز پارٹی کی سربراہ سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو نے اپنے مطالبات تسلیم کئے جانے کے حوالے سے حکومت کو چار اکتوبر کی ڈیڈ لائن دی تھی، پیپلز پارٹی میں ذمہ دار ذرائع کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کی سربراہ اور سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو نے قومی سلامتی کونسل کے سیکرٹری اور صدر جنرل پرویز مشرف کے معتمد خاص طارق عزیز سے رابطہ کر کے تیسری بار وزیراعظم بننے پر پابندی ختم کرنے اور مقدمات کے خاتمہ سمیت دیگر مطالبات تسلیم کرنے کیلئے کل چار اکتوبر بروز جمعرات کی ڈیڈ لائن دی ہیذرائع کے مطابق محترمہ کا کہنا تھا کہ اگر حکومت نے کل تک ہمارے مطالبات تسلیم نہ کئے تو 5اکتوبر کو ہم قومی و صوبائی اسمبلی سے اپنے استعفے دیدیں گے۔ ذرائع کے مطابق ٹیلیفون پر ہونے والے رابطے میں بینظیر بھٹونے طارق عزیز کو یاد دلایا ہے کہ صدر مشرف نے ان سے ملاقات کے دوران وعدہ کیا تھا کہ اگر پیپلز پارٹی ان کا ساتھ دے تو وہ صدارتی انتخابات سے قبل وردی اتارنے سمیت اس کے دیگر مطالبات بھی منظور کر لیں گے۔ مگر ابھی تک کوئی وعدہ پورا نہیں کیا گیا۔ جس کی وجہ سے ہمیں خدشات ہیں کہ صدر مشرف چوہدری برادران کے دباؤ میں آکر ہمارا کوئی بھی مطالبہ پورا نہیں کریں گے اور ہمیں عوام میں نقصان ہو گا۔ ذرائع کے مطابق بینظیر بھٹو نے طارق عزیز پر واضح کیا ہے کہ اگر کل چار اکتوبر تک ان کے مطالبات منظور نہ کئے گئے تو پیپلز پارٹی پانچ اکتوبر کو قومی اسمبلی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں سے اپنے اراکین پارلیمنٹ کے استعفے سپیکرز کے پاس جمع کرا دے گی۔ ذرائع کے مطابق بینظیر بھٹو کی ہدایات پر پیپلز پارٹی کے قومی و صوبائی اسمبلیوں کے اراکین پارلیمنٹ کو 5 اکتوبر سے قبل استعفے پارلیمانی لیڈر کے پاس جمع کرانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق بینظیر بھٹو نے طارق عظیم کو بتایا کہ حکومت نے 2002ء میں بھی پیپلز پارٹی کے ساتھ دھوکہ کیا تھا اور ہمارے بہت سارے اراکین پارلیمنٹ کو اپنے ساتھ ملا کر حکومت قائم کی تھی اور اب اس وقت بھی ہمارے مطالبات تسلیم کرنے کے مسئلے پر حتمی جواب نہیں دیا جا رہا۔ ذرائع کے مطابق بینظیر بھٹو نے طارق عزیز پر واضح کر دیا ہے کہ وہ جنرل مشرف کو بتا دیں کہ انہوں نے پیپلز پارٹی کے مطالبات تسلیم نہ کئے تو وہ قومی اور صوبائی اسمبلیوں سے ہر حال میں استعفے دیدیں گے۔ کیونکہ پہلے بھی مذاکرات کے چکر میں پڑ کر پیپلز پارٹی کو عوامی میں خاصی سبکی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

Tags:

حکومت نے درس نظامی کی ڈگری پر ایکشن میں حصہ لینے پر پابندی کا قانون پاس کرنے کا اصولی فیصلہ کر لیا

October 2nd, 2007 · No Comments · پاکستان

فیصل آباد ۔ حکومت نے درس نظامی کی ڈگری پر الیکشن میں حصہ لینے پر پابندی کا قانون پاس کرنے کا اصولی فیصلہ کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق ذمہ دار ذرائع نے بتایا کہ ایم ایم اے کی طرف سے جنرل مشرف کی حمایت نہ کرنے اور اسملیوں سے استعفے دینے کے بعد حکومت پاکستان نے فیصلہ کر لیا ہے کہ درس نظامی کی ڈگری جس کو الیکشن کمیشن نے بی اے کے برابر قرار دیا تھا اس ڈگری کے تحت الیکشن میں حصہ لینے پر پابندی کا قانون بنانے کیلئے تیاری کر لی ہے۔ قومی اسمبلی کے آئندہ اجس میں یہ بل منظوری کیلئے پیش کیا جا سکتا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ صرف گورنمنٹ آف پاکستان کے منظور شدہ کالجز کی ڈگری پر ایلکشن میں حصہ لیا جا سکے گا۔ اس قانون کے پاس ہونے کے بعد ایم ایم اے سب سے زیادہ متاثر ہو گی قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر سمیت کئی اہم راہنما الیکشن میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

Tags:

پیپلز پارٹی اور وکلاء کے صدارتی امیدوار وجیہہ الدین احمد نے صدر مشرف کی نا اہلی کیلئے علیحدہ علیحدہ درخواستیں دائر کر دیں

October 2nd, 2007 · 1 Comment · پاکستان

اسلام آباد ۔ پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرین کے صدر مخدوم امین فہیم اور وکلاء کے نامزد صدارتی امیدوار جسٹس (ر) وجیہہ الدین احمد نے صدر مشرف کے کاغذات نامزدگی منظور کرنے کے الیکشن کمیشن کے فیصلے کیخلاف صدر جنرل پرویز مشرف کی نا اہلی کیلئے سپریم کورٹ میں علیحدہ علیحدہ آئینی درخواستیں دائر کر دی ہیں، آئینی درخواستوں میں چیف الیکشن کمشنر، وفاق پاکستان، صدر جنرل پرویز مشرف ، میاں محمد سومرو، چوہدری امیر حسین اور فیاض تالپور کو پارٹی بنایا گیا ہے، درخواستیں الیکشن کمیشن میں صدارتی امیدوار کی طر ف سے جنرل پرویز مشرف کیخلاف دائر کردہ اعتراضات کے مسترد کئے جانے کے بعد دائر کی گئی ہیں۔ درخواستوں میں کہا گیا ہے کہ آئین کے آرٹیکل 41(2) کے تحت صدر جنرل پرویز مشرف الیکشن لڑنے کے اہل نہیں ہیں اور آرٹیکل 62 کے تحت وہ ایماندار، امانتدار اور وعدہ وفا کرنے والے نہیں ہیں۔ چیف الیکشن کمشنر کا آرڈر آئین اور جمہوریت کیخلاف ہے۔ آئین کے آرٹیکل 63 کا اطلاق صدر جنرل پرویز مشرف پر بھی ہوتا ہے اور ملازم ہونے کی وجہ سے وہ انتخابات میں حصہ نہیں لے سکتے۔ آئین کے آرٹیکل 63(1) کا تعلق مجلس شوریٰ اور پارلیمنٹ کیلئے امیدوار کی اہلیت کے حوایل سے ہیں جس سے پری پری اور پوسٹ الیکشن کیلئے نا اہل کرتی ہے۔ جنرل پرویز مشرف چونکہ 5 س کیلئے صدر بننا چاہتے ہیں اس لئے ان کا انتخاب میں حصہ لینے سے آرٹیکل 43 روکتا ہے، درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ الیکشن کمیشن کی طرف سے جنرل پرویز مشرف کے کاغذات کی منظوری کو غیر آئینی قرار دیکر کالعدم قرار دیا جائے علاوہ ازیں انہیں صدر کے انتخاب کیلئے نا اہل قرار دیا جائے۔ جنرل پرویز مشرف کے کاغذات نامزدگی مسترد کرتے ہوئے بقیہ صدارتی انتخاب کے مرحلے کو بھی کالعدم قرار دیا جائے۔

Tags:

اسمبلیوں سے استعفے،دو اراکین نے اے پی ڈی ایم کے فیصلے سے لاتعلقی کا اظہار کردیا

October 2nd, 2007 · No Comments · پاکستان

موجودہ حالات میں مستعفی ہونے کا کوئی فائدہ نہیں ،استعفے دباؤ کے ذریعے لئے گئے لہٰذا منظور نہ کئے جائیں، جمعیت علمائے اسلام کے صوبائی وزیر آغا فیصل داؤد اور جمعیت اہلحدیث کی خاتون رکن آمنہ خانم کا سپیکر سے تحریری درخواست میں مطالبہ

کوئٹہ۔آل پارٹیز ڈیموکریٹک موومنٹ کی جانب سے بلوچستان اسمبلی سے اراکین کے مستعفی ہونے کے موقع پر متحدہ مجلس عمل میں پھوٹ پڑ گئی ،ایم ایم اے کے دو اراکین نے اسپیکر کو ایک تحریری درخواست میں اے پی ڈی ایم کے فیصلوں سے لاتعلقی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان سے استعفے دباؤ کے ذریعے لئے گئے انہوں نے اسپیکر سے مطالبہ کیا کہ ان کے استعفے منظور نہ کئے جائیں۔جمعیت علمائے اسلام (ف) سے تعلق رکھنے والے صوبائی وزیر تعمیر ات و مواصلات آغا فیصل داؤد نے سپیکر کو اپنی درخواست میں لکھا ہے کہ انہوں نے اسمبلی سے استعفیٰ نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے کیونکہ اب مستعفی ہونے کا کوئی فائدہ نہیں۔اگر استعفوں کا فیصلہ چند سال پہلے ہوتا تو کوئی معنی رکھتا تھا مگر اب یہ انگلی کٹا کر شہیدوں میں شریک ہونے کے مترادف ہے اوریہ فیصلہ اے پی ڈی ایم کے جسٹس وجیہہ الدین کو نامزد کرنے کے خلاف ہے ۔آغا فیصل داؤد نے اپنی درخواست میں مزید کہا ہے کہ بلوچستان میں ایم ایم اے کے وزراء کے علاقوں میں جو ترقیاتی کام ہوئے ہیں ان کی ماضی میں مثال نہیں ملتی ۔پانچ سال کی حکومت کرکے آخر میں استعفیٰ دینا خود غرضی اور عوام کو بے وقوف بنانے کے مترادف ہے ۔اسلام ہمیں مفاد کی سیاست کرنے کا حکم نہیں دیتا ان پانچ برسوں میں بلوچستان اسمبلی سے ایک بھی بل اسلام کیلئے پاس نہیں کرایا گیا اگر جمعیت کا مقصد صرف سیاست کرنا ہے تو وہ کسی بھی پلیٹ فارم سے ہوسکتی ہے ۔اپنی درخواست میں انہوں نے جمعیت علماء اسلام کوتنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ جمعیت کا میرے ساتھ ہمیشہ سوتیلا رویہ رہا ہے انہوں نے صوبائی وزیر مولانا عبدالواسع پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ ساری جماعت و وزراء کی پی ایس ڈی پی اسکیم وزیراعلیٰ سے منظور کروائی ماسوائے ان کی پی ایس ڈی پی کی اسکیم اور ان کے اس رویئے کا میرے تمام علاقے والوں کو صدمہ ہے ۔آغا فیصل داؤ نے مزید لکھا ہے کہ قلات اورتمام تحصیلوں سے جماعتی الیکشن جیتنے کے باوجود بھی جماعت ہمارے فیصلوں کو کالعدم قرار دیتی ہے اور بہت سی دیگر باتیں ہیں جو میں خود پریس کے سامنے جلد پیش کروں گا لہٰذا ان حالات میں وہ استعفیٰ نہیں دیں گے جبکہ جمعیت اہلحدیث سے تعلق رکھنے والی خاتون رکن صوبائی اسمبلی آمنہ خانم نے سپیکر کو بھیجی گئی ایک درخواست میں کہا ہے کہ وہ موجودہ حالات میں وہ استعفیٰ نہیں دینا چاہتی انہوں نے سپیکر جمال شاہ کاکڑ سے اپیل ہے کہ وہ ان کی غیر موجودگی میں ان کا استعفیٰ منظور نہ کریں ۔واضح رہے کہ استعفوں سے لاتعلقی کا اظہار کرنے والے آغا فیصل داؤ د اور آمنہ خانم دونوں منگل کے روز اے پی ڈی ایم کے رہنماؤںکی جانب سے صوبائی اسمبلی کے اسپیکر کو استعفے پیش کرنے کے موقع پر موجود نہیں تھے ۔آغا فیصل داؤد کا استعفیٰ سینیٹر کامران مرتضیٰ نے جمع کروایا تھا۔

Tags:

علی احمد کرد کو وکلاء کیخلاف نازیبا کلمات کہنے پر نوٹس

October 2nd, 2007 · No Comments · پاکستان

آپ کے جذباتی اور غیر سنجیدہ رویہ نے وکلاء کی بھی توہین کی ہے، ڈاکٹر اسلم خاکی

اسلام آباد ، سپریم کورٹ آف پاکستان کے ایڈووکیٹ اور انصاف ویلفیئر ٹرسٹ کے چیئرمین ڈاکٹر اسلم خاکی نے سپریم کورٹ کے ایڈووکیٹ رہنما علی احمد کرد کو ایک نوٹس بھیجا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ علی احمد کردنے 28 ستمبر کے سپریم کورٹ کے فیصلے کے موقع پر سخت جذباتی رویہ کا مظاہرہ کیا جس سے عدلیہ کی توہین بھی کی گئی اور اپنی وکلاء برادری کی بھی۔ نوٹس میں کہا گیا ہے کہ آپ علی احمد کرد نے اس موقع پر فیصلہ کے تائیدی جج صاحبان کے متعلق جو کہا وہ تو عدلیہ اس کا نوٹس لینے کی مجاز ہے مگر میری تشویش آپ کے اس بیان سے ہے جو آپ نے اس موقع پر میڈیا کے سامنے یوں ادا کئے۔ ’’وہ مرد کا بچہ نہیں ہو گا جو وکیل کل الیکشن کمیشن کے گھیراؤ کے موقع پر نہیں آئے گا‘‘ یہ کہ مذکورہ بالا بیان سے جو آپ کے انتہائی جذباتی اور غیر ذمہ دارانہ رویہ کی ایک کڑی ہے عام وکلاء اور خاص طور پر جو سیاسی تحریکوں کا حصہ نہیں بننا چاہتے کیلئے سخت ذہنی کوفت کا سبب بنی ہے۔ نوٹس میں کہا گیا ہے کہ مذکورہ بیان وکلاء کی آزادی رائے و آزادی الحاق کے حق کیخلاف ہونے کے علاوہ انتہائی مکروہ الزام جو قذف بھی ہو سکتا ہے کے مترادف ہے اس لئے بذریعہ نوٹس آپ سے درخواست کی جاتی ہے کہ آپ اپنے اس بیان کو واپس لیں اور اس پر آپ کے سینئر مرتبہ اور ماضی میں وکلاء کاز کیلئے جدوجہد کے پیش نظر آپ سے کسی قسم کی معافی کہلوانے کی بجائے صرف یہ درخواست کی جاتی ہے کہ آپ اپنے اس بیان پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے آئندہ محتاط رویہ رکھیں۔

Tags:

آ مرانہ نظام پرکاری ضرب لگا نے والے ممبران اسمبلی خراج تحسین کے مستحق ہیں‘ رفیق تارڑ

October 2nd, 2007 · No Comments · پاکستان

لاہور۔پاکستان کے سابق صدرمحمد رفیق تارڑ نے کہا ہے کہ اے پی ڈی ایم کے ارکان اسمبلی نے استعفے دے کرآمریت کی متعفن نعش کے تابوت میں آخری کیل ٹھونک دیا ہے۔آ مرانہ نظام پرکاری ضرب لگا نے والے ممبران اسمبلی خراج تحسین کے مستحق ہیں۔اپوزیشن کے اس اقدام کے بعد اب صدارتی انتخاب کااخلاقی جواز بھی باقی نہیں رہا۔آئین کے آرٹیکل 64کے تحت 86ارکان کے استعفوں کے ساتھ ہی ان کی نشستیں خالی ہوگئی ہیں۔سپیکر قومی اسمبلی کا حالیہ بیان “وہ نہیں بتاسکتے 6اکتوبر تک ان استعفوں کی آئینی پوزیشن کیا ہوگی “کی کوئی آئینی حیثیت نہیں ہے۔باوردی صدارت سمیت مختلف قومی ایشوز کیخلاف اے پی ڈی ایم کے ممبران کے استعفوں پراپنے ردعمل کااظہار کرتے ہوئے محمد رفیق تارڑ نے مزید کہا کہ آئین کے آرٹیکل64کے مطابق جونہی کوئی ممبرپارلیمنٹ اپنا استعفیٰ سپیکر اسمبلی کوپیش کردے تواس کے ساتھ ہی اس کی نشست خالی ہوجاتی ہے ۔انہوںنے کہا کہ استعفے کیلئے کسی رسمی منظوری کی ضرورت نہیں ہوتی یہ پیش ہونے کے فوراً بعد موثر ہوجاتا ہے۔

Tags:

برطانوی وزیراعظم بغداد پہنچ گئے،دھماکوں اور آپریشن میں٢ امریکی فوجیوں سمیت ٧ ہلاک

October 2nd, 2007 · No Comments · پاکستان

بغداد۔ عراق میں بم دھماکوں اور امریکی فوجی آپریشن میں دو امریکی فوجیوں سمیت سات افراد ہلاک ہو گئے ہیں ،ادھر برطانیہ کے وزیراعظم گورڈن براؤن نے کہا ہے کہ برطانیہ رواں سال کے آخرتک مزید ایک ہزارفوجیوں کو واپس بلا لے گا جبکہ جنوب مشرقی بغداد میں سڑک کے کنارے نصب بم دھماکے میں ایک پولیس اہلکار ہلاک اور پانچ زخمی ہوئے۔مشرقی بغداد میں سڑک کے کنارے نصب بم دھماکے میں دو افراد ہلاک اور چار زخمی ہوئے۔امریکی فوجی بیان کے مطابق وسطی بغداد اورصوبہ قادسیہ میں مزاحمت کاروں کے خلاف آپریشن میں دو امریکی فوجی ہلاک اور گیارہ زخمی ہوئے جبکہ ایک عراقی مترجم اور ایک عام شہری مارا گیا۔ دوسری طرف برطانیہ کے وزیراعظم گورڈن براؤن عراق کے دورے پر بغداد پہنچ گئے ۔ اپنے عراقی ہم منصب نوری المالکی سے ملاقات کے بعد صحافیو ں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایک ہزار برطانوی فوجی سال کے اخر تک واپس بلا لئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ برطانیہ دو ماہ کے اندر بصرہ کی سیکورٹی کی ذمہ داری عراقی سیکورٹی فورسز کے حوالے کر دے گا۔ ادھر عراقی وزیر اعظم نوری المالکی نے صحافیوں کو بتایا کہ عراقی سیکورٹی فورسز دو ماہ بصرہ کا کنٹرول برطانوی فوجیوں سے حاصل کر لیں گی۔

Tags:

ہائے مہنگائی۔ڈاکوؤں نے سپرہائی وے پر چینی کی ٥٠ بوریاں لوٹ لیں

October 2nd, 2007 · No Comments · پاکستان

کراچی ۔ ڈاکوؤں نے سپرہائی وے پر ٹرک سے چینی کی 50 بوریاں لوٹ لیں، اسی علاقہ میں پھلوں کے آرھتی سے 3 لاکھ روپے لوٹ لئے گئے۔ نارتھ ناظم آباد میں عمرہ کی ادائیگی کے بعد واپس آنے والی فیملی کو ڈاکوؤں نے ملکی و غیر ملکی کرنسی اور طلائی زیورات سے محروم کردیا۔ تفصیلات کے مطابق منگل کی صبح گڈاپ کے علاقہ میں سپرہائی وے پر 6 مسلح ڈاکوؤں نے چینی کی بوریوں سے لدے ٹرک کو روک لیا اور ڈرائیور کو یرغمال بناکر ٹرک سے چینی کی 50 بوریاں ، دوسرے ٹرک میں لاد کر فرار ہوگئے۔ گڈاپ پولیس نے اس واردات کی اطلاع کی تصدیقی کی ہے۔ سہراب گوٹھ کے علاقہ نیو سبزی منڈی کے سامنے سپرہائی وے سروس روڈ پر ڈاکوؤں نے پھلوںکے آڑھتی ذوالفقار سے 3 لاکھ روپے لوٹ لئے۔ قبل ازیں نارتھ ناظم آباد میں ڈاکوؤں نے عمرہ کی ادائیگی کے بعد ایئرپورٹ سے گھر جانے والے احسن اور اس کے اہل خانہ کو یرغمال بناکرملکی کرنسی، لاکھوں روپے مالیت کے زیورات اور دیگر سامان لوٹ لیا۔ معلوم ہوا ہے کہ یکم رمضان المبارک سے 18 رمضان المبارک کے دوران عمرے کی سعادت حاصل کرکے کراچی پہنچنے والے دو درجن سے زائد افراد کو ایئرپورٹ سے تعاقب کرکے مسلح افراد نے مختلف مقامات پر لوٹ لیا ہے۔ دریں اثناء نیو کراچی کے علاقہ میں سندھی ہوٹل کے قریب مقامی دوا ساز کمپنی کے سیلزمین اقبال سے مسلح افراد 36 ہزار روپے اور موبائل فون چھین کرلے گئے۔ نیو کراچی صنعتی ایریا کے علاقہ میں 4 مسلح افراد نے حسین اور ان کے اہل خانہ کو یرغمال بناکر 75 ہزار روپے، بھاری مالیت کے طلائی زیورات اور ایک لاکھ روپے مالیت کے انعامی بانڈز لوٹ لئے۔ نارتھ ناظم آباد میں حیدری مارکیٹ کے قریب عید کی خریداری کے لئے آنے والی خاتون شمع ناز اور ان کے دو بچوں کو مسلح افراد نے یرغمال بناکر 18 ہزار روپے اور طلائی چین لوٹ لی اور فرار ہوگئے۔

Tags:

مسلم لیگ (ن) کے سابق ڈپٹی میئر سیالکوٹ اورنگ زیب شاہ جی اشتہاری قرار دیدیئے گئے

October 2nd, 2007 · No Comments · پاکستان

سیالکوٹ ۔ سول جج وعلاقہ مجسٹریٹ سیالکوٹ شعیب عدیل نے تھانہ سول لائن کے ڈکیتی کے مشہور مقدمہ میںملوث مسلم لیگ (ن) کے سابق ڈپٹی مےئر سیالکوٹ اورنگ زیب شاہ جی کو عدم گرفتاری کی وجہ سے اشتہاری ملزم قراردیدیا ہے اور پولیس کو حکم دیا ہے کہ ملزم اورنگ زیب شاہ جی کو گرفتار کیا جائے ۔ دریں اثناء پولیس کی بھاری نفری نے ملزم کی گرفتاری کیلئے تھانہ کوتوالی کے علاقہ کریم پورہ میں اس کی فیکٹری چھاپہ مارا تاہم ملزم کی عدم موجودگی کی وجہ سے اس کی گرفتاری عمل میں نہ لائی جاسکی ۔ایس ایچ او تھانہ سول لائن انسپکٹر آفتاب صابر نے بتایا ہے کہ مسلم لیگ (ن) سے تعلق رکھنے والے سابق ڈپٹی مےئر سیالکوٹ اورنگ زیب شاہ جی نے کلاشنکوف سے مسلح ہوکر مقامی طلبہ تنظیم کے مسلح کارکنوں کے ہمراہ ڈسٹرکٹ کوآرڈنیشن آفیسر سیالکوٹ کی سرکاری رہائش گاہ کے عقب میں ایک شہری شوکت کے80لاکھ روپے مالیت کے مکان پر قبضہ کرنے کی نیت سے دن دیہاڑے حملہ کیااور ہوائی فائرنگ کرنے اور اہل خانہ کوتشدد کا نشانہ بنانے کے علاوہ ڈکیتی کی واردات کی جوکہ آج تک ملزم روپوش ہے اور اب عدالت نے اسے اشتہاری مجرم قراردیدیا ہے ۔

Tags:

افغانستان ‘جھڑپیں اور خودکش حملہ، ٢٦ طالبان،١٥ پولیس اہلکارہلاک

October 2nd, 2007 · No Comments · پاکستان

کابل۔ افغانستان کے جنوبی صوبے میں جھڑپوں میں چھبیس طالبان کو ہلاک کر دیا گیا۔صوبی کنڑ میں تین پولیس اہلکار اور دارلحکومت کابل میں پولیس اہلکاروں کی بس میں خود کش حملہ کر کے بارہ پولیس اہلکاروں کو ہلاک اور پندرہ کو زخمی کردیا گیا۔کابل میں افغان وزارت دفاع کے مطابق جنوبی صوبہ ہلمند میں افغان اور اتحادی فوج کی طالبان کے ساتھ جھڑپوں میں چھبیس طالبان مارے گئے۔صوبہ کنڑ میں طالبان نے پولیس چیک پوسٹ پر حملہ کر کے تین پولیس اہلکاروں کو ہلاک اور پانچ کو زخمی کردیا۔۔دارلحکومت کابل میں ایک خود کش حملہ آور نے پولیس افسران کو لے جانے والی بس میں داخل ہو کر خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ خود کش حملے میں بارہ پولیس اہلکار ہلاک ہوئے۔دھماکے کے فوری بعد امدادی کارروائیاں شروع کر دی گئیں۔زخمی ہونے والے پندرہ اہلکاروں کو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جن میں بعض کی حالت تشویشناک ہے۔ہفتے کو کابل میں ہی افغان فوجیوں کی بس میں خود کش حملہ کر کے اکتیس فوجیوں کو ہلاک کر دیا گیا تھا۔

Tags: