بھارت‘ پانچ روز میں دو سائنسدانوں کی پراسرار ہلاکتیں سوالیہ نشان بن گئیں

ممبئی ‘ بھارت میں پانچ روز کے اندردو ایٹمی سائنسدانوں کی پراسرار ہلاکتیں سوالیہ نشان بن گئیں۔ مہادیون بدمانابھان کوسرپروارکرکے قتل کیا گیا جبکہ نرایانن کی لاش پٹری پر پائی گئی۔ ایک سال کے دوران تین بھارتی سائنسدان پراسرار انداز میں قتل ہوئے۔اندرا گاندھی سینٹر فارایٹامک ریسرچ کے سائنسدان آنتھا نرایانن کی لاش چنائی سے قریب ٹرین کی پٹری پرپراسرار حالت میں پائی گئی ہے۔ سائنٹفک افسرآنتھا نرایانن 15 فروری سے لاپتہ تھے۔ بھارتی سائنسدان کی پراسرارموت کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی۔ لاش پوسٹ مورٹم کے بعد ورثا کے حوالے کردی گئی ہے۔ پانچ روز قبل بھابھا ایٹامک ریسرچ سینٹرکے سائنسدان مہادیون پدمانابھان کی لاش اس کے کمرہ میں رسیوں سے بندھی پائی گئی۔مہادیون کو سرپروار کرکے قتل کیا گیا تھا۔ گزشتہ سال جون میں کایگا کرناٹک میں ایٹمی سائنسدان ایل مہالینگام کو پراسرار طریقہ سے قتل کیا گیا تھا،جس کی لاش دریائے کالی سے ملی تھی۔ ایک سال کے دوران تین ایٹمی سائنسدانوں کی ایک ہی انداز میں پراسرار ہلاکتیں حساس اداروں کی ناقص ترین سیکورٹی کا مظہرہیں،جن سے ظاہر ہوتا ہے کہ بھارتی ایٹمی نظام انتہائی غیرمحفوظ ہے۔

Share

1 Comment to "بھارت‘ پانچ روز میں دو سائنسدانوں کی پراسرار ہلاکتیں سوالیہ نشان بن گئیں"

  1. شاہد مسعود احمد's Gravatar شاہد مسعود احمد
    March 1, 2010 - 1:35 am | Permalink

    بھارت میں کوئی کتا یا بلا بھی مرئے تو وہ پاکستان کو ذمہ دار قرار دیتا ہے؟؟؟؟؟ اب تو سائنسدان مر گئے ہیں پاکستان کی اب خیر نہیں ھم نہ جانے کب تک مجرمان غفلت کا ثبوت دیں گئے بھارت کو اسی زبان میں جواب کیوں نہیں دیتے کہ رام رام چھری نکال کر بات کریں ورنہ کم از کم اس کی رام رام کو ہی لگام لگام کہہ دیں شاید وہ اپنی گندی زبان یا گندی پالیسی کو بدل لئے۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔مشکل ہے کوئی کتا بھونکنے سے باز نہیں اسکتا جب تک کو ڈنڈا یا بتھر نہ ہو ھم کتے کو پلیز پلیز کہتے رہیں نہ وہ پلیز کا مطلب جانے نہ بھونکنا بند کرے۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔انتظار کرو کسی زہریلے بیان کا یا تبصرے کا۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔

Leave a Reply