Urdu News

Urdu News…The 3rd Largest Online Urdu Newspaper

Urdu News header image 4

Entries from April 30th, 2010

نیپرا نے بجلی کی قیمتوں میں 57پیسے فی یونٹ کمی کا اعلان کر دیا

April 30th, 2010 · No Comments · بریکنگ نیوز, پاکستان

اسلام آباد۔نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے مارچ کے لئے بجلی کی قیمتوں میں 57پیسے فی یونٹ کمی کا اعلان کر دیا ہے ۔ نیپرا کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق بجلی پیدا کر نے والی کمپنیوں کے لئے مارچ کے لئے بجلی کی قیمتوں میں 6.30 روپے فی یونٹ کم کر کے 5.73روپے فی یونٹ کر دیا ہے ۔ نیپرا کے مطابق بجلی کی قیمتوں میں کمی مارچ کے دوران بجلی کی پیداواری لاگت میں کمی کے پیش نظر کیا گیا ہے ۔ اس کمی کا اطلاق بجلی استعمال کر نے والے تمام صارفین پر ہو گا اور اپریل کے بل میں اس کا فائدہ عوام تک پہنچایا جائے گا ۔ واضح رہے کہ فروری میں پیداواری لاگت بڑھنے کے باعث حکومت نے بجلی کی قیمتوں میں 1 روپیہ 2 پیسے اضافے کا فیصلہ کیا تھا۔

Tags:

پاکستان اوربھارت کے درمیان تمام مسائل کے حل کا واحد راستہ جامع مذاکرات ہیں ۔ترجمان دفتر خارجہ

April 30th, 2010 · No Comments · پاکستان

اسلام آباد۔دفتر خارجہ کے ترجمان عبدالباسط نے کہا ہے کہ پاکستان اوربھارت کے درمیان تمام مسائل کے حل کا واحد راستہ جامع مذاکرات ہیں ۔ ایک انٹرویو میں ترجمان نے کہا ہے کہ پاکستان نے بھارت کے ساتھ طویل المدت اسٹرٹیجک تعلقات کی ہمیشہ حمایت کی ہے او راب یہ بھارت پر منحصر ہے کہ وہ کیا فیصلہ کرتا ہے ترجمان نے کہاہے کہ پاکستان سنجیدہ ہے اور آگے بڑھنا چاہتا ہے اور جانتا ہے کہ دہشت گردی ایک عالمی مسئلہ ہے انہوں نے کہاکہ پاکستان او ربھارت کو تمام مسائل کے حل کیلئے مذاکرات کی میز پر آنا چاہیے سارک کے بارے میں ترجمان دفتر خارجہ عبدالباسط نے کہاکہ ہم نے اس تنظیم کو زیادہ فعال اور متحرک کرنے پر توجہ مرکوز کر رکھی ہے۔

Tags:

آزاد تجارتی معاہدے کا حجم بڑھانے کے لئے سارک ممالک حساس اشیاء کی فہرست مختصر کر نے پر توجہ دیں۔سید یوسف رضا گیلانی

April 30th, 2010 · No Comments · پاکستان

اسلام آباد۔وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ آزاد تجارتی معاہدے کا حجم بڑھانے کے لئے سارک ممالک حساس اشیاء کی فہرست مختصر کر نے پر توجہ دیں۔ سارک کانفرنس میں شرکت کے بعد پاکستان پہنچنے پر ایک بیان میں وزیر اعظم نے کہا کہ دہشت گردی بین الاقوامی علاقائی اور مقامی مسئلہ ہے جس سے نمٹنے کے لئے مشترکہ کوششوں کی ضرورت ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ انہوں نے سارک ممالک کو تجویز دی ہے کہ پانی کی بچت اور ماحولیاتی تبدیلیوں کے اثرات سے نمٹنے کے لئے مشترکہ کوششیں کی جائیں ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے تجویز دی ہے کہ سارک ممالک میں موسمی تبدیلیوں کا جائزہ لینے کے لئے پاکستان میں سینٹر قائم کیا جائے اور قدرتی آفات سے نمٹنے کے لئے ماہرین پر مشتمل کمیشن تشکیل دیا جائے ۔

Tags:

صدر آصف علی زر داری نے قلات میں 3بہنوں پر تیزاب پھینکنے کے واقع کا نوٹس لے لیا

April 30th, 2010 · No Comments · پاکستان

بلوچستان حکومت سے رپورٹ طلب،متاثرہ خواتین کو صحت کی سہولیات فراہم کر نے کی ہدایت

اسلام آباد۔صدر آصف علی زر داری نے قلات میں 3 بہنوں پر تیزاب پھینکنے کے واقع کا سخت نوٹس لیتے ہوئے صوبائی حکومت سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ جمعہ کے روز صدر آصف علی زر داری نے بلوچستان کے علاقے قلات میں 3 بہنوں پر تیزاب پھینکنے کے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے صوبائی حکومت سے رپورٹ طلب کی ہے اور اس واقعے کو وحشیانہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس واقعے کے مجرموں کو سزا دی جائے گی۔صدر مملکت نے صوبہ بلوچستان کی حکومت کو ہدایت کی ہے کہ وہ اس واقعہ کے ذمہ داران کو ڈھونڈ کر انصاف کے کٹہرے تک لائیں ۔ انہوں نے کہا کہ افسوسناک امر ہے کہ دو ہفتوں کے دوران قلات اور دالبدین کے علاقے میں خواتین پر تیزاب پھینکنے کے دو واقعات پیش آئے ہیں۔ صدر مملکت نے صوبائی حکومت کو ہدایت کی کہ متاثر خواتین کے علاج و معالجے اور ان کی صحت یابی کے لئے بھرپور اقدامات کرے۔

Tags:

جامع مذاکرات کے آغاز کیلئے بھارتی وزیر خارجہ سے مشاورت کیلئے جلد رابطہ کیا جائے گا۔شاہ محمود قریشی

April 30th, 2010 · No Comments · پاکستان

مذاکرات کو صرف دہشت گردی تک ہی محدود نہیں رکھا جائے گا، نئے مذاکراتی عمل میں مذاکرات کے تمام نکات شامل ہوں گے

پاک بھارت وزراء اعظم کے ٹیلی فونک رابطے کیلئے حالات ساز گار ہو چکے ہیں

وزیر خارجہ کی اسلام آباد میں سارک کانفرنس کے حوالے سے میڈیا کو بریفنگ

اسلام آباد۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ جامع مذاکرات کے آغاز کیلئے بھارتی وزیر خارجہ سے مشاورت کیلئے جلد رابطہ کیا جائے گا۔ مذاکرات کو صرف دہشت گردی تک ہی محدود نہیں رکھا جائے گا بلکہ نئے مذاکراتی عمل میں مذاکرات کے تمام نکات شامل ہوں گے ۔ اب حالات ایسے سازگار ہو چکے ہیں کہ دونوں وزراء اعظم بلا تکلف ٹیلی فونک رابطہ کر سکیں گے۔ گزشتہ روز ا سلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہاکہ سات مئی کو بجٹ کے حوالے سے بھارتی لوک سبھا کے اجلاس کے خاتمے کے بعد بھارتی وزیر خارجہ ایس ایم کرشنا سے رابطہ کر کے جامع مذاکرات کے جلد آغاز کیلئے مشاورت کی جائے گی اس کے بعد مذاکرات کے آغاز کیلئے طریقہ کار اور حتمی تاریخ طے کی جائے گی اور جامع مذاکرات میں دونوں ممالک کے درمیان حل طلب مسائل پر بحث کی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ دونوں وزراء اعظم کے درمیان ملاقات انتہائی مثبت تعمیری اور با مقصد رہی ہے اور جامع مذاکرات کے آغاز کی پاکستانی خواہش پوری ہوئی ہے اور مذاکرات کو صرف دہشت گردی تک محدود نہیں کیاجائے گا اور پہلے سے جاری تمام معاملات کو زیر بحث لایا جائے گا انہوں نے کہاکہ نئے مذاکراتی عمل میں مذاکرات کے تمام نکات شامل ہوں گے انہوں نے کہاکہ سارک کانفرنس میں بہت سے معاملات زیر بحث آنے کے علاوہ مختلف تجاویز بھی سامنے آئی ہیں ۔ یہ تجویز بھی سامنے آئی ہے کہ دہلی میں زیر تعمیر ساؤتھ ایشین یونیورسٹی کی نیشنل ریجن برانچیں ہونی چاہیں تاکہ اس سے پورا خطہ مستفید ہو سکے ۔ سارک یوتھ پر بھی خاصا تبادلہ خیال کیاگیا کہ اس معاملے پر ہمیں کیسے آگے بڑھنا ہے اس بات پر بھی فیصلہ وہا کہ اگلا سترہواں سارک سربراہ اجلاس مالدیپ میں ہو گا اس موقع پر سمجھوتے بھی طے پائے جن میں ٹریڈ سروسز اور دوسرا سارک کنونش کو آپریشن ہے۔ وزیر خارجہ نے کہاکہ سارک اجلاس کے موقع پر ہونے والی ملاقاتیں بڑی اہمیت کی حامل ہیں ان میں زیادہ اہم وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی اور بھارتی وزیراعظم کے درمیان ہونے والی ملاقات ہے یہ ملاقات انتہائی مفید مثبت اور با مقصد تھی جس کا نتیجہ بڑا خوش آئند سامنے آیا ہے پاکستان کی خواہش تھی کہ جامع مذاکرات کا دوبارہ آغاز ہونا چاہیے جس سے بھارت نے اتفاق کیا ہے یہ انتہائی اہم پیشرفت ہے انہوں نے کہاکہ ایشو صرف پاکستان کے ہی نہیں بلکہ بھارت اور افغانستان کے بھی ہیں اعتراف کیاگیا کہ مسئلہ کسی ایک علاقے یا ملک تک محدود نہیں ہے۔ بلکہ یہ علاقائی اور عالمی ہے اور اس کا ہمیں مل کر مقابلہ کرنا ہو گا ۔ لہذٰا طے پایا ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان ماضی میں زیر بحث معاملات کو مستقبل میں بھی جامع مذاکرات زیر بحث لایا جائے یہ بھی طے پایا ہے کہ دونوں ممالک کے وزیر خارجہ اور سیکرٹری خارجہ پہلے آپس میں رابطہ کریں اور ان مذاکرات کا طریقہ کار طے کریں ۔ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ بھارتی لوک سبھا کے سات مئی کے اجلاس کے بعد میں اپنے بھارتی ہم منصب سے رابطہ کرنے کا ارادہ رکھتا ہوں تاکہ ان سے مشاورت کر کے حتمی تاریخ طے کی جائے ۔ انہوں نے کہاکہ یہ ایک بڑی خوشگوار پیش رفت ہے ۔ انہوں نے کہاکہ بھراتی وزیراعظم کی سوچ بڑی مثبت تھی انہوں نے خود کہا کہ میری یہ خواہش ہے کہ دونوں ممالک کے تعلقات میں بہتری آئے تاکہ میں اور بھارتی وزیراعظم اس کی بنیاد بنیں اور ہم بلا تکلف فون پر ایک دوسرے سے بات کر سکیں اور تکلف ختم ہو کیونکہ اس خطے کے بہت سے چیلنجز ہیں اور ان پر غلبہ حاصل کیا جا سکے یہ سب کچھ مل جل کر ہی ہو سکتا ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ بجلی صرف پاکستان کا ہی نہیں بلکہ دنیا کے اکثر ممالک کا مسئلہ ہے ۔ بنگلہ دیش ، نیپال ، بھارت سمیت کئی ممالک بجلی کی کمی کے مسئلے سے دو چار ہیں بھوٹان میں اس مسئلے پر خاصی بحث تمحیص ہوئی کہ ہم علاقائی اپروچ کو اختیار کرتے ہوئے کس طرح اس مسئلے پر قابو پاسکتے ہیں فیصلہ یہ ہوا کہ انرجی پر سارک کے ممالک کو آپس میں بیٹھ کر مشاورت کرنی چاہیے اور ایک جامع حکمت عملی اپنانی چاہیے پانی پر بھی خاصی بحث ہوئی کہ خطے کے ممالک آنے والے دنوں میں پانی کے مسئلے سے دو چار ہوں گے۔ چنانچہ ہمیں واٹر منیجمنٹ کیلئے بھی کام کرنا ہو گا اس بات پر بھی اتفاق کیا گیا کہ سارک ممالک میں موجودہ پانی کا ضیاع زیادہ ہے اس ضیاع کو روکنے کیلئے بھی حکمت عملی اختیار کی جائے ۔

Tags:

افغانستان : ناٹو افواج نے 3 خواتین کو گولیاں مار کر قتل کر دیا

April 30th, 2010 · No Comments · افغانستان

جاں بحق ہو نے والی خواتین میں ایک جواں سال لڑکی بھی ہے

ناٹو افواج نے ان کی کار کو طالبان کی کار سمجھا۔ ۔ ۔ افغان وزارت دفاع کا بیان

کابل۔افغانستان میں ناٹو افواج نے کار میں جاتے ہوئے ایک جوانسال لڑکی سمیت تین خواتین کو گولیاں مار کر قتل کر دیا افغان وزارت داخلہ کے ترجمان زمرئی بشرے نے صحافیوں سے گفتگو کر تے ہوئے کہا ہے کہ جمعہ کو غیرملکی افواج کے ایک کانوائے نے ایک جوانسال لڑکی اور دو خواتین کو اس وقت گولیاں مار کر قتل کر دیا جب وہ ایک کار میں سامنے والے راستے سے آ رہی تھیں افغان وزیر داخلہ کے مطابق ناٹو افواج نے ان کی کار کو طالبان کی کار سمجھ کر نشانہ بنایا جس سے تینوں موقع پر ہی جاں بحق ہو گئیں۔

Tags:

اورکزئی ایجنسی میں عسکریت پسندوں کے خلاف پاک فوج کا آپریشن 16عسکریت پسندہلاک 2فوجی جوان شہید

April 30th, 2010 · No Comments · افغانستان

اسلام آباد۔اورکزئی ایجنسی میں عسکریت پسندوں کے خلاف پاک فوج کی کارروائی میں 16دہشت گرد ہلاک جبکہ دو فوجی جوان شہید ہو گئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق جمعہ کو سیکیورٹی فورسز نے اورکزئی کے علاقوں عیسیٰ خیل اور میر گھڑی کے علاقوں میں عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائی کی جس میں سولہ عسکریت پسند ہلاک ہو گئے ہیں جبکہ جھڑپ کے دوران دو فوجی جوان بھی شہید ہو گئے ۔ واضح رہے کہ پاک فوج نے انتیس مارچ کو ان علاقو ںکو آپریشن کر کے عسکریت پسندوں سے پاک کر دیا تھا۔ ادھر دوسری طرف لوئر اورکزئی سے نقل مکانی کرنے والے لوگوں نے و اپس اورکزئی جانا شروع کر دیا ہے۔

Tags:

خفیہ ادارے کے سابق افسر خالد خواجہ کو قتل کر دیا گیا۔۔۔اپ ڈیٹ و تفصیل

April 30th, 2010 · No Comments · بریکنگ نیوز, پاکستان

ایشین ٹائیگر نامی تنظیم نے قتل کی ذمہ داری قبول کر لی

شوہر کی شہادت پر فخر ہے۔ ۔ ۔ شمائلہ خالد

شہادت کی موت خالد خواجہ کی خواہش تھی جو پوری ہوئی

خالد خواجہ کی اہلیہ کی بات چیت

میران شاہ۔خفیہ ادارے کے سابق رکن خالد خواجہ کو قتل کر دیا گیا ہے۔ ان کی لاش میران شاہ کے علاقے میر علی کی روڈ سے ملی ہے۔ خالد خواجہ کرنل امام اورایک برطانوی صحافی کو رواں سال 26مارچ کو اسلام آباد سے جنوبی وزیرستان جاتے ہوئے اغواء کیاگیاتھا۔ ایشین ٹائیگر نامی غیر معروف تنظیم نے اغواء کی ذمہ داری قبول کی اور ان کی رہائی کے بدلے طالبان رہنماؤں کی رہائی کا مطالبہ کیا تھا۔ خالد خواجہ خفیہ ادارے کے افسر تھے ان کی لاش کے پاس سے ایک خط ملا ہے جس میں ایشیئن ٹائیگر تنظیم نے دعویٰ کیاہے کہ خالد خواجہ لال مسجد واقعہ میں ملوث تھے اورامریکہ کیلئے جاسوسی کرتے تھے۔ خالد خواجہ کو سر اور سینے پر گولی مار کر قتل کیا گیا ہے ۔ تاہم دوسرے مغویوں کے بارے میں تاحال کوئی اطلاع نہیں ۔ ایشین ٹائیگر تنظیم نے گزشتہ دنوں ایک وڈیو میں تینوں کے اغواء کا دعویٰ کیاتھا ویڈیو میں خالد خواجہ ، کرنل امام اور برطانوی صحافی کے پیغامات تھے ان پیغامات میں تینوں مغویوں نے اپنے آپ کو مسلح افراد کی قید میں بتایا تھا۔ادھر خالد خواجہ کی اہلیہ شمامہ خالد کہناہے کہ شوہر کی شہادت پر فخر ہے ۔نجی ٹی وی سے گفتگوکرتے ہوئے شمامہ خالد نے کہاکہ انھوں نے خالد خواجہ کو وزیرستان جانے سے منع کیا تھا۔ انھوں نے کہاکہ خالدخواجہ کو طالبان نے نہیں جرائم پیشہ عناصر نے قتل کیاہے ۔ جرائم پیشہ عناصر طالبان کو بدنام کررہے ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ عثمان نامی شخص نے خالد خواجہ اور دیگر افراد کو اغواء کیاتھا۔ دوسری جانب ایشین ٹائیگرنامی تنظیم نے خالد خواجہ کے قتل کی ذمہ داری قبول کرلی ہے ۔ تنظیم کاکہناہے کہ خالد خواجہ کو لال مسجد کے واقعے میں ملوث ہونے کی وجہ سے قتل کیا گیا ہے ۔خالد خواجہ ، کرنل ریٹائرڈ امام اور برطانوی صحافی اسد قریشی کو چھبیس مارچ کواغواء کیا گیا تھا کہ جس کی ویڈیو بھی جاری کی گئی تھی ۔ ویڈیومیں خالد خواجہ ، کرنل ریٹائرڈ امام اور برطانوی صحافی اسدقریشی نے کہاتھاکہ انھیں مسلح افراد نے اغواء کیاہے۔

Tags:

عوام کو ریلیف دینے تک حکومتی پالیسیاں عوام دوست نہیں کہلاسکتیں ۔نوازشریف

April 30th, 2010 · No Comments · پاکستان

٭۔ ۔ ۔ آج ایک عام شہری کیلئے دو وقت کی روٹی کمانا ہی بنیادی مسئلہ بنتا جا رہا ہے،ذاتی گھر کا خواب محض سراب سے زیادہ کی حیثیت نہیں رکھتا

٭۔ ۔ ۔ حکمران عوامی وسائل کا احساس کرتے ہوئے تمام معاملات میں اور ہرسطح پر سادگی کو اپنا شعار بنائیں

٭۔ ۔ ۔ 18ویں ترمیم کی منظوری کے بعد حکومت اور پارلیمنٹ کے پاس عوامی مسائل سے چشم پوشی کی کوئی گنجائش نہیں رہ گئی،عوام کے ساتھ کئے گئے تمام وعدے پورے کئے جائیں

لاہور۔پاکستان مسلم لیگ(ن) کے قائدمحمد نوازشریف نے کہاہے کہ ہم یہ عہد کرتے ہیں کہ پاکستان میں رہنے والے ہر شہری کا روزگار ،رہائش،تعلیم اور علاج اس کے بنیادی حق کے طورپر تسلیم کریں گے اور اُسے یہ حق دلوانے کی جدوجہد مسلم لیگ(ن) کے ایجنڈے کا اولین نقطہ ہے اور رہے گی۔ جس معاشرے میں مزدور اور محنت کش طبقہ محرومیوں کا شکار ہواور اُس کی جان و مال اور عزت محفوظ نہ ہو ، وہ معاشرہ نہ تو ترقی کی منازل طے کر سکتا ہے اور نہ ہی اُس کا شمار دنیا کی مہذب اقوام میں کیاجاتاہے۔مزدوروں کے معاشی حقوق کا تحفظ اوراُنہیں معاشرے میں باعزت مقام دلاناہم سب کی بنیادی ذمہ داریوں میں اہم ترین ذمہ داری ہے۔انہوں نے ان خیالات کااظہارمزدوروں کے عالمی دن کے موقع پر اپنے ایک خصوصی پیغام میں کیا ہے۔ نوازشریف نے کہاہے کہ آج پوری دُنیا بدترین معاشی حالات سے دوچار ہے اور دُنیا بھر میںمعیشت کی بدحالی کے منفی اثرات کاسب سے بڑا شکار وہ محنت کش اور مزدورافراد بنے ہیں جو روزانہ کی بنیاد پر مزدوری کرکے اپنا اور اپنے اہل خانہ کا پیٹ پالنے کیلئے کئی کئی گھنٹوں کی مشقت کرنے پر مجبور ہیں اوراس کے نتیجے میں بمشکل دو وقت کی روٹی ہی اُن کا مقدر بن پاتی ہے ۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میں ایسے لوگوں کی کمی نہیں جن کی پوری زندگیاں مزدوری کرتے ہوئے گزر گئیں لیکن وہ ساری عمر محض دو وقت کی روٹی ہی کی فکر میں سرگرداں رہے ،بدقسمتی سے نہ تو اِنہیں بچوں کیلئے تعلیم اور اُن کی اچھی صحت کے بارے میں سوچنے کا موقع ملا اور نہ ہی وہ آخر دم تک اُنہیں رہائش کیلئے چھت فراہم کرسکے ۔ انہوں نے کہاکہ موجودہ کمرتوڑ مہنگائی نے تو اچھے بھلے تعلیم یافتہ اور نوکری کرنے والے طبقے کیلئے اپنا ذاتی گھربناناتو درکنا اُس کاخواب دیکھنا بھی شاید سراب سے زیادہ محسوس نہیں ہوتا۔نوازشریف نے کہاکہ ہمیں اِن حالات کا احساس کرتے ہوئے اپنی ذمہ داریوں کا تعین کرنا ہوگا۔اگر ایسا نہ کیاگیا تو خدانخواستہ صورتحال مزید سنگین ہو جائیگی اور عوام کی مایوسی اور بے یقینی ایک بڑے بحران کو جنم دینے کا باعث بن جائے گی۔ نوازشریف نے کہاکہ ملک کی معیشت کو اُس وقت تک بہتر نہیںکہاجاسکتا اور حکومت کی پالیسیاں عوام دوست نہیں کہلائیں گی جب تک حکومت اس بات کی ضمانت فراہم نہ کرے دے ،جن کے نتیجے میںمحنت کش طبقے کو نہ صرف دو وقت کی روٹی میسر ہو سکے بلکہ پاکستان کا شہری ہونے کی حیثیت سے اُنہیںتعلیم ،صحت ،روزگا ر میں تسلسل ،ذاتی گھراور اچھے مستقبل کی ضمانت فراہم نہ کی جائے۔ انہوں نے کہاکہ گذشتہ دورِ آمریت میں آمر کی غیر حقیقت پسندانہ پالیسیوں کے نتیجے میں پاکستان میں امن و امان کی صورتحال نہایت ہی مخدوش اور شکستہ ہو کررہ گئی ، جس کی وجہ سے ملک کی معیشت تاریخ کے سب سے بڑے بحران سے دوچار ہوئی ، اندرون ملک اور بیرون ممالک سے سرمایہ کاری کا عمل ٹھہراؤکا شکار ہوگیا اور اس کانتیجہ بڑھتی ہوئی بے روزگاری اور مہنگائی کی صورت میں پوری قوم آج تک بھگت رہی ہے۔نوازشریف نے کہاکہ معیشت کی تباہی اور روزگار کی عدم فراہمی کے پیچھے جہاں غلط پالیسیوں کا عمل دخل تھا اُس کی رہی سہی کسر لوڈشیڈنگ نے پوری کردی۔لوڈشیڈنگ ہی کے نتیجے میں صنعتی پیداوار میں خاطر خواہ کمی آئی اور صنعتی کارکنان کی بڑی تعداد کو باعزت روزگار تک سے ہاتھ دھونے پڑے جو کہ ہم سب کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔ اگر حکومت نے لوڈشیڈنگ کے مسئلے کے مستقل حل کیلئے دُورَس اقدامات کرنے میں سنجیدہ رویہ اختیار نہ کیا توا س سے لوگوں کی ذاتی زندگیوں اور تمام شعبہ ہائے زندگی پر نہایت ہی خطرناک اثرات مرتب ہونگے اور بڑھتی ہوئی مہنگائی اور بے روزگاری کسی نئے بحران کو جنم دے ڈالے گی۔نوازشریف نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ دو سال گزرجانے کے باوجود حکومت کی جانب سے لوڈشیڈنگ کاخاتمہ کرنے کیلئے کسی قابل ذکر اور ٹھوس منصبوبے کا آغاز نہیں کیاجاسکا۔اگر حکومت نے شروع سے ہی اپنی ترجیحات کا درست انداز سے تعین کیاہوتااور مہنگائی اور لوڈشیڈنگ جیسے مسائل کو حل کرنے کے لئے عملی اقدامات اٹھائے گئے ہوتے تو آج عوام ان بنیادی مسائل کے حل کیلئے سڑکوں پر نہ نکل آتے۔انہوں نے کہاکہ 18ویں ترمیم کی منظوری اورقوم کے منتخب نمائندوں کواختیارات کی منتقلی کے بعد حکومت اور پارلیمنٹ میں موجود سیاسی قوتوںکے پاس عوامی مسائل سے چشم پوشی کی کوئی گنجائش باقی نہیں رہ گئی اور اب وقت آ گیا ہے کہ تمام تر توجہ عوام کے مسائل کے حل کی جانب دی جائے۔ نوازشریف نے کہاکہ مرکزی اور چاروں صوبوں کی حکومتوں کا فرض ہے کہ وہ تمام تر وسائل ،صلاحیتیں اور قوتیں عوام کو ریلیف دینے کیلئے وقف کردیں۔جب تک ملک کے تمام وسائل کا رُخ ملک میںرہنے والے عوام کی جانب پھیر نہیںدیاجاتااُس وقت تک معیشت میں بہتری اور خوشحالی کے دعوے کھوکھلے اور بے بنیاد ہیں۔وسائل کے درست استعمال کو یقینی بنانے کیلئے کرپشن کے ناسور سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنا ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ ملک میں قائم منتخب مرکزی اور صوبائی حکومتوں کی عوام دوستی کادعویٰ اُس وقت سچا ثابت ہوگا جب بہترین اصول حکمران پر عمل پیرا ہو کر حکمران ہر سطح پر سادگی اور کفایت شعاری کو فروغ دیں اور وسائل کے درست استعمال کو یقینی بنانے کیلئے خود احتسابی پر مبنی ٹھوس اقدامات یقینی بنائے جائیں۔ نوازشریف نے کہاکہ عالمی یوم مزدوراں ہم سے اِس بات کا بھی تقاضا کرتاہے کہ ہم اپنے ملک میں ایسے سازگار مواقع اور ماحول پیدا کریں کہ ہم اپنے اُن بھائیوں اور بیٹوں ،بیٹیوں کو وطن واپس لے آئیں جو روزگارکی خاطر ملک چھوڑنے پر مجبور ہوئے اور اچھی تعلیم ہونے کے باوجود بیرون ممالک اپنے تعلیمی معیار ، صلاحیتوں اور اہلیت سے کہیں کم سطح پر محنت کرکے اپنے اور اہلخانہ کے گزر بسر کی جدوجہد کررہے ہیں۔

Tags: ·

پارلیمانی انتخابات میں بیرونی مداخلت کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی، نورالمالکی

April 30th, 2010 · No Comments · دنیا کی خبریں

عراقی وزیر اعظم کی پارلیمانی انتخابات میں بیرونی مداخلت کی دعوت پر حریف پر کڑی تنقید

بغداد۔عراقی وزیر اعظم نور المالکی نے پارلیمانی انتخابات میں بیرونی مداخلت کی دعوت پر اپنے حریف کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ انتخابات میں بیرونی ممالک کا کردار ملک کی خود مختاری کے لیے نقصان دہ ہوگا ۔ بیرونی مداخلت کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق عراقی وزیر اعظم نور المالکی نے جمعہ کو بغداد میں اپنے حریف پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمانی سیٹ اپ کے لیے بیرونی مداخلت ایک منفی اقدام ہوگا۔انہوںنے زوردیتے ہوئے کہا کہ عراق میں بیرونی مداخلت سے اس کی خود مختاری اور سالمیت متاثر ہوگا اس لیے وہ عراق میں بیرونی مداخلت برداشت نہیں کریں گے ۔

Tags: