Urdu News

Urdu News…The 3rd Largest Online Urdu Newspaper

Urdu News header image 4

Entries from July 31st, 2010

پاکستان میں بارشوں اور سیلاب سے تباہی ، سینکڑوں ہلاک ، لاکھوں بے گھر ہو گئے

July 31st, 2010 · No Comments · بریکنگ نیوز, پاکستان

خیبر پختونخوا + پنجاب + بلوچستان + آزاد کشمیر ‘ ( نیوز اردو ڈاٹ نیٹ ) ملک میں میں بارشوں اور سیلاب سے بڑے پیمانے پر تباہی پھیل گئی ہے جس کے نتیجے میں سینکڑوں افراد ہلاک اور لاکھوں بے گھر ہو گئے ہیں ۔خیبر پختونخوا ، فاٹا، شمالی علاقہ جات اور پنجاب کے بعض ضلعوں میں بارش اور اسکے بعد سیلاب نے زبردست تباہی پھیلا دی ہے جس کے نتیجے میں غیر سرکاری اعداد و شمار کے مطابق 700 سے زائد افراد ہلاک ہو گئے ہیں ۔

آج ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق خیبر پختونخوا ، فاٹا، شمالی علاقہ جات اور پنجاب کے بعض ضلعوں میں بارش اور اسکے بعد سیلاب نے انسانی المیے کو جنم دیا ہے۔ چند ہی روز میں چھ سو اکانوے افراد لقمہ اجل بن گئے۔ صوبہ خیبر پختونخواء میں سیلاب کی تباہ کاریاں سب سے زیادہ ہیں۔
آج نیوز کے اعداد و شمار کے مطابق اب تک چھ سو اکانوے افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔ مالاکنڈ ڈویژن میں تین سو پچپن، پشاور میں اٹھارہ، بونیر میں پانچ، مردان میں چار، ہنگو میں پانچ، صوابی میں چار، کرک میں انیس، ہزارہ ڈویژن میں ایک سو سینتیس، لکی مروت میں تین، کوہاٹ میں تئیس، ٹانک میں دو، چارسدہ میں نو، نوشہرہ میں پندرہ اور چترال میں پانچ افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔
شمالی وزیرستان میں گیارہ، باجوڑ میں آٹھ اور مہمند ایجنسی میں تین افراد سیلابی ریلے سے جاں بحق ہوئے۔گلگت دیامر، غذر اور استور میں سیلاب اور بارشوں سے تیرہ افراد جاں بحق ہوئے۔ بلوچستان میں اب تک نو افراد ابدی نیند سو چکے ہیں جن میں تین سبی، دو کچھی، دو جھل مگسی، ایک جعفر آباد اور ایک نصیرآباد کا رہائشی تھا۔ اسی طرح آزاد کشمیر میں بھی سیلاب نے بڑے پیمانے پر تباہی پھیلائی ہے۔ یہاں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد تینتالیس ہے۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق ملک میں سیلاب سے بڑے پیمانے پر تباہی پھیل گئی ہے ۔ لاہور/ مظفر آباد: پنجاب اور آزاد کشمیر میں دریائے سندھ، چناب اور جہلم میں مختلف مقامات پر اونچے درجے کا سیلاب ہے۔ ملحقہ علاقوں میں سیکڑوں بستیاں زیر آب آنے سے ہزاروں افراد پانی میں گھرے ہوئے ہیں۔
راولپنڈی میں سروپا کے علاقے میں تین افراد دریائے سواں میں ڈوب گئے۔ مقامی لوگ اپنی مدد آپ کے تحت لاشوں کی تلاش کررہے ہیں۔ خوشاب میں دریائے جہلم میں اونچے درجے کا سیلاب ہے۔ مختلف واقعات میں چار افراد جاں بحق ہوگئے۔ منڈی بہاوٴالدین میں دریائے جہلم میں ملکوال کے نزدیک امدادی کارروائیوں کے دوران کشتی دریا میں پھنس گئی۔
مظفر آباد اور میرپور میں سیلاب سے متعدد مقامات پر لینڈ سلائڈنگ اور مکانات منہدم ہونے سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد سینتالیس ہوگئی۔ متعدد رابطہ سڑکیں بند اور پلوں کو نقصان پہنچا ہے۔ شاہراہ نیلم تین روز سے بند ہے۔وادی نیلم میں تین سو سے زائد مکانات کو نقصان پہنچا۔ چترال میں باپ بیٹا دریائے چترال کے ریلے میں ڈوب گئے۔ دریاوٴں اور ندی نالوں میں طغیانی کے باعث گلگت بلتستان کے بیشتر علاقوں کا زمینی رابطہ منقطع ہوگیا ہے۔
بھکر میں پانچ دیہات زیر آب آگئے ہیں جس سے بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی۔ فصلوں کو نقصان پہنچا اور کچے کے علاقے میں سینکڑوں مکانات منہدم درجنوں مویشی بہہ گئے۔ سینکڑوں افراد ابھی تک سیلاب میں پھنسے ہوئے ہیں۔ لیہ میں سیلابی پانی متعدد بستیوں میں داخل ہونے سے دوہزار سے زائد افراد محصور ہوگئے ہیں۔ فوجی جوانوں نے امدادی کارروائیاں شروع کردی ہیں۔
دوسری جانب بلوچستان میں بارشوں اور سیلاب کی وجہ سے کئی دیہات زیر آب آگئے ہیں جہاں ہزاروں افراد سیلابی پانی پھنسے ہوئے ہیں جبکہ راستے مکمل طور پر بند ہونے کی وجہ سے ان علاقوں میں کھانے پینے کی چیزوں کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔
سیلاب سے ژوب اور نصیر آباد ڈویژن زیادہ متاثرہوئے ہیں۔ ژوب، قلعہ سیف اللہ شاہراہ بدستور بند ہیں۔ سبی میں دریائے ناڑی میں نچلے درجے کا سیلاب ہے۔حکومتی اعلانات کے باوجود متاثرہ علاقوں میں لوگوں کے پاس امدادی سامان نہیں پہنچ سکاہے۔ وزیراعلیٰ بلوچستان نواب محمد اسلم رئیسانی آج ڈیرہ مراد جمالی میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کر رہے ہیں۔
خیبرپختونخواہ میں بھی بارشوں اور سیلاب نے تباہی مچادی ہے۔سیلاب میں اب تک جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد چارسو سے زائد ہوگئی۔نظام زندگی مفلوج ہوکر رہ گیا ،ہزاروں افراد بدستور پانی میں محصور ہیں ۔
صوبے میں بارش اور سیلاب کے نتیجے میں ساٹھ رابطہ پل اور سڑکیں بہہ گئیں جس کی وجہ سے متعدد علاقوں کا زمینی رابطہ منقطع ہے۔ سیلاب کی وجہ سے چارسدہ اور پشاور روڈ بند ہے۔دریائے سوات میں منڈا اور دریائے کابل میں ورسک کے مقامات پر پانی کے بہاوٴ میں اضافہ ہورہاہے۔
سوات اور شانگلہ میں سیلاب اور بارشوں کی وجہ سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد تین سو دس ہوگئی ہے۔ متاثرین کو ہیلی کاپٹرز اور کشتیوں کے ذریعے محفوظ مقامات پر منتقل کیا جارہا ہے۔ مینگورہ سے کالام تک تمام رابطہ پل بہہ گئے ہیں۔
شانگلہ، مانسہرہ اور دیگر علاقوں میں کئی رابطہ پل بہہ گئے ہیں جبکہ بستیاں زیر آب آگئی ہیں۔ کچھ علاقوں میں امدادی کارروائیاں شروع کی گئی ہیں تاہم بڑی تعداد میں لوگ اب بھی امداد کے منتظر ہیں۔
ڈیرہ اسماعیل خان میں دریائے سندھ میں پانی کی سطح کم ہونا شروع ہوگئی ہے۔ متاثرہ علاقوں میں پاک فوج کے جوان امدادی کارروائیوں میں مصروف ہیں۔پاک فوج کے بیس ہیلی کاپٹر بھی لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کررہے ہیں۔کور کمانڈر پشاور آصف یاسین نے مینگورہ میں سیلاب کی تباہ کاریوں کا جائزہ لیا۔ناران میں سابق چیف جسٹس رانا بھگوان داس بھی اہل خانہ کے ساتھ پھنسے ہوئے ہیں۔
سیلاب کی وجہ سے دبیر اور پٹن کے علاقوں میں چار ہزار افراد محصورہوگئے ہیں۔دبیر میں ہائیڈرو پاورپراجیکٹ میں سیلابی پانی داخل ہونے سے دو سو چینی انجینئر بھی پھنسے ہوئے ہیں۔

Tags: ···

طوفانی بارش و سیلاب ، 408 ہلاکتوں کی تصدیق

July 30th, 2010 · No Comments · بریکنگ نیوز, پاکستان

پشاور ،مظفر آباد ‘ آج ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق صوبہ خیبر پختونخوا میں طوفانی بارش اور لینڈ سلائیڈنگ کے باعث ہلا ک ہونے والے افراد کی تعداد چار سو آٹھ سے زائد ہوگئی ۔ صوبائی حکومت نے ہلاکتوں کی تصدیق کردی ۔صوبائی وزیر اطلاعا ت میاں افتخار حسین نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ابھی تک صوبے میں چارسو آٹھ افراد کے ہلاک ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں ۔

سوات میں ایک سو سینتیس، شانگلہ میں ترانوے، صوابی میں چار، کرک میں اٹھارہ، ہزارہ بڈگرام الائی میں بیالیس، کوہاٹ میں تئیس، چارسدہ میں نو، نوشہرہ میں دس اور چترال میں پانچ افراد لقمہ اجل بن گئے۔شمالی وزیرستان میں گیارہ اور باجوڑ ایجنسی میں چھ افراد سیلابی ریلے سے جاں بحق ہوئے۔ شمالی علاقہ جات میں اب تک جاں بحق ہونے والوں میں دو کا تعلق گزر سے اور پانچ کا تعلق دیامیر اور استوار کے اضلاع سے ہے۔

بلوچستان میں اب تک چار افراد ابدی نیند سو چکے ہیں جن میں تین سبی اور ایک نصیرآباد کا رہائشی تھا۔ اسی طرح آزاد کشمیر میں بھی سیلاب نے بڑے پیمانے پر تباہی پھیلائی ہے۔ یہاں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد پچیس ہے۔ اس طرح ان تمام علاقوں میں اب تک تین سو اکیانوے افراد خالق حقیقی سے جا ملے ہیں۔

Tags: ···

خیبر پختونخوا ‘ بلوچستان ‘ آزاد کشمیر‘ بارش و سیلاب 350 افراد جاں بحق

July 30th, 2010 · No Comments · بریکنگ نیوز, پاکستان

اسلام آباد ‘پشاور ‘ آج ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ملک بھر میں بارش و سیلاب کا سلسلہ جاری ہے ۔ صوبہ خیبر پختونخوا ،شمالی علاقہ جات ،بلوچستان اور آزاد کشمیر میں بارش ،سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ سے مختلف مقامات پر 350 سے زائد افراد اپنی زندگی سے ہاتھ دھوبیٹھے ۔ ملک بھر میں بارش اور سیلا ب کا سلسلہ جاری ہے۔ سب سے زیادہ تباہی ضلع سوات اور شانگلہ میں ہوئی ہے۔ قدرتی آفت میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد سوا دو سو سے تجاور کرگئی ہے۔ سوات میں سیلاب کے باعث ہلاکتوں میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ چھتیں گرنے سے ہلاک ہونے اور آبی ریلوں میں بہہ جانے والوں کی تعداد ایک سو پینتیس ہوگئی۔ کبل میں چھت گرنے سے ایک ہی خاندان کے گیارہ افراد جاں بحق اور دو زخمی ہوگئے۔ گل کدہ سیدو شریف میں چھت گرنے سے ایک ہی خاندان کے تین افراد جاں بحق ہوئے۔

خوازہ خیلہ میں سیلاب سے مزید سات افراد جاں بحق اور بارہ لاپتہ ہیں۔ جانبیل میں پاک فوج کا جوان سیلاب میں بہہ کر شہید ہوگیا۔ مینگورہ پولیس لین میں چالیس پولیس اہلکار پانی میں پھنسے ہوئے ہیں۔ شانگلہ کے علاقے اولندر میں تین مکانات پر پہاڑی تودہ گرگیا۔ ملبے سے سولہ لاشیں نکال لی گئیں اور مزید افراد کے پھنسے ہونے کا خدشہ ہے۔ ضلع شانگلہ میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد تیرانوے ہوگئی۔ سوات اور شانگلہ میں مواصلات کا نظام بھی درہم برہم ہے۔ موبائل فون سروس بھی معطل ہے۔

Tags: ·····

خیبرپختونخوا ‘ بارشیں ، سیلاب، 241 افراد جاں بحق

July 29th, 2010 · No Comments · بریکنگ نیوز, پاکستان

پشاور ‘ آج نیوز کی رپورٹ کے مطابق صوبہ خیبر پختونخواہ میں بارش نے گذشتہ تمام ریکارڈ توڑ دیئے جس کے نتیجے میں پورا صوبہ سیلاب کی زد میں آگیا اب تک241 افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہوئی ہے جن میں چھ چینی باشندے اور دو سیکورٹی اہلکار بھی شامل ہیں۔ سب سے زیادہ تباہی سوات، شانگلہ اور کوہستان میں ہوئی ہے۔ جہاں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد ایک سو نوے سے تجاوز کرگئی۔ کوہستان میں سیلاب سے چھ چینی باشندوں ، دو ایف سی اہلکاروں سمیت اسی افراد ہلاک ہوگئے۔ پٹن میں پچپن چینی ماہرین میں سے باون کو نکال لیا گیا۔ دوبیر میں سو سے زاہد افراد لاپتہ ہیں۔ ضلع بھر میں ہزاروں گھر اور متعدد رابطہ پل بہہ گئے۔ مواصلات کا نظام بھی درہم برہم ہے۔

سوات میں شدید بارش اور سیلاب کے باعث ہزاروں افراد نے نقل مکانی شروع کردی ہے۔ مینگورہ شہر بھی سیلاب کی زد میں آگیا ہے۔ علاقے میں مواصلات کا نظام بھی تباہ ہوگیا ہے۔ بجلی کئی گھنٹوں سے معطل ہے۔ کبل میں مکان کی چھت گرنے سے چھ بچوں سمیت ایک ہی خاندان کے گیارہ افراد ہلاک ہوگئے۔ چھوٹا کالام میں دریائے سوات میں پھنسے نو افراد کو اب تک نہیں نکالا جاسکا ہے۔ امدادی کاموں میں مصروف رضاکار بھی دریا کی لہروں میں بہہ گیا۔ بحرین میں سیلابی ریلا متعدد مکانات اور ہوٹلوں کو بہا لے گیا۔ متعدد مساجد بھی شہید ہوگئیں۔ بحرین کا بازار صفحہ ہستی سے مٹ گیا۔ انتہائی اونچے درجے کے سیلاب کے باعث دریائے سوات کے تمام پل ٹریفک کے لیے بند کردیے گئے۔

ادھر شانگلہ میں بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی ہے،شانگلہ کو دوسرے اضلاع سے ملانے والے درجنوں پل بہہ گئے۔ داموڑئی، شاہ پور اور دیگر علاقوں میں سیلاب سے ساڑھے تین سو مکانات، بنیادی مرکز صحت اور پانچ اسکول بہہ گئے۔ سیلاب سے متعدد چھوٹے بجلی گھر تباہ ہونے سے بیشتر علاقوں میں بجلی معطل ہے۔ دیر لوئر میں سیلاب سے ہلاکتوں کی تعداد تیرہ ہوگئی۔ شرینگل میں بینظیر بھٹو شہید یونیورسٹی، بوائز کالج اور ہاسٹل سیلاب کی نذر ہوگئے تیرہ سرکاری اسکول، نو پل اور کئی مکانات سیلاب میں بہہ گئے۔ دیر بالا میں مزید دس افراد سیلاب میں بہہ گئے،ہلاکتوں کی تعداد سولہ ہوگئی۔ بونیر میں چھت گرنے سے دو افراد جاں بحق ہوگئے۔

Tags: ··

خیبر پختونخوا : بارش و سیلاب ،جاں بحق افراد کی تعداد108ہوگئی

July 29th, 2010 · 2 Comments · بریکنگ نیوز, پاکستان

پشاور ‘ آج ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق خیبر پختونخوا میں بارش اور ندی نالوں میں طغیانی نے تباہی مچادی۔ سوات اور شانگلہ میں بارش اور سیلاب کے باعث چون افراد جا ں بحق ہوگئے ،صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد ایک سو آٹھ ہوگئی ۔ لوئر دیر کے علاقہ چکدرہ میں آبی ریلے کے با عث ایک سو دو افراد سرکاری ریسٹ ہاوس میں پھنس گئے۔ سوات اور شانگلہ میں سیلاب نے تباہی مچادی،مجموعی طور پر چون افراد کے جاں بحق ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں ۔ جس میں بچے اور خواتین بھی شامل ہیں ۔سوات میں آبی ریلے میں بہہ کر بچے سمیت چار افراد جاں بحق ہوگئے۔ شانگلہ کے علاقے داموڑئی، شاہ پور خوڑ اور ڈھیرئی میں مختلف حادثات کے دوران خاتون سمیت سترہ افراد ہلاک اور دو لاپتہ ہوگئے جبکہ سوات اور شانگلہ میں ہی بارش اور سیلاب کے باعث مختلف مقامات پر چوبیس افراد جاں بحق ہوگئے۔دیر لوئر میں رابطہ پل متاثر ہونے سے تیمر گرہ پشاور روڈ بند ہوگیا۔ تیمر گرہ بازار میں برساتی نالے میں طغیانی کے باعث پانی دکانوں میں داخل ہوگیا۔ دیر بالا میں بچی سمیت تین افراد ڈوب کر کر ہلاک ہوگئے۔ پن چکی، درجن سے زائد مویشی اور ٹیوب ویل سیلاب میں بہہ گئے۔ تخت بھائی میں مدرسے کی چھت گرنے سے ایک طالب علم جاں بحق اور دس زخمی ہوگئے۔مانسہرہ میں لینڈ سلائڈنگ سے شاہراہ قراقرام بند ہوگئی۔ داسو میں دو افراد ہلاک ہوگئے۔ کوہستان کا ملک کے دیگر حصوں سے زمینی رابطہ منقطع ہوگیا۔ ٹانک میں متعدد مکانات منہدم اور پانی گھروں میں داخل ہوگیا۔ لکی مروت میں دریاوٴں میں طغیانی سے کئی دیہات زیر آب آگئے۔ زیر تعمیر پل تعمیراتی سامان سمیت بہہ گیا۔ادھر دریائے گمبیلا سے ایک شخص کی لاش ملی ہے۔ ڈیرہ اسماعیل خان میں مکان کی چھت گرنے سے ایک بچی جاں بحق اور دو افراد زخمی ہوگئے۔ آبی ریلے میں دو افراد ڈوب کر ہلاک ہوگئے، شدید بارش کے باعث دریائے سندھ کے کنارے آباد متعدد دیہات زیر آب آگئے۔جنوبی وزیرستان میں آسمانی بجلی گرنے سے دو سیکورٹی اہلکار جاں بحق اور دو زخمی ہوگئے۔ کرک میں چھت گرنے سے دو بچے ہلاک ہوگئے۔ خدہ بانڈہ میں سیلاب میں بہہ کر طالب علم ہلاک ہوگیا۔ پشاور میں ناصر باغ، متھرا، ورسک، شاہی بالا اور تاج آباد میں سیلاب آگیا۔ قادر آباد میں مکان کی چھت منہدم ہونے سے تین اور بڈھ بیر میں چار افراد جاں بحق ہوگئے۔ دریائے خیالی میں اونچے درجے کے سیلاب کے باعث بڑے نقصان کا خدشہ ہے۔دوسری جانب گلگت بلتستان میں استور کے مقام پر دریائے بڑے پانی کے پل کا رسہ ٹوٹ گیا جس سے دو افراد ڈوب گئے۔ پل ٹوٹنے سے استور اور اسکردو کے درمیان ٹریفک معطل ہوگیا ہے۔بنوں اور کوہاٹ میں موسلادھار بارش اور آبی ریلوں سے متعدد علاقے زیر آب آگئے۔بنوں میں تیز بارش کے باعث تھانہ غوریوالہ، تھانہ ہوید اور تھانہ میریان کی حدود میں بیشتر علاقے زیر آب آگئے۔ گاوٴں بھرت مچن خیل اور شمشی خیل میں پچیس سے زائد گھر تباہ ہوگئے۔ درجنوں مال مویشی پانی میں بہہ گئے۔ گورنمنٹ ہائی اسکول مچن خیل میں امدادی کیمپ قائم کردیا گیا ہے جہاں متاثرین کو غذائی اشیاء فراہم کی جارہی ہیں۔ دریائے کرم میں طغیانی سے آٹھ کروڑ روپے سے تعمیر شدہ پل کا ایک حصہ پانی میں بہہ گیا جس کے بعد پل کو ٹریفک کے لیے بند کردیا گیا۔ کوہاٹ میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں سے جاری بارش کے باعث مختلف علاقے زیر آب آگئے۔ جرما، ذرہ خیلہ، ہمیش گل بانڈہ ، چیچنہ،حافظ آباد ، سورگل اور مسلم آباد میں درجن سے زائد مکانات سیلاب کے باعث منہدم ہوگئے۔ آبی ریلے سے کھڑی فصلیں تباہ ہوگئیں۔کمشنر کوہاٹ کی ہدایت پر تمام سرکاری اسکولوں میں متاثرین کے لیے ریلیف کیمپس قائم کردیے گئے۔ پاک فوج کے جوان سیلاب میں پھنسے لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کررہے ہیں۔دوسری جانب گلگت بلتستان میں استور کے مقام پر دریائے بڑے پانی کے پل کا رسہ ٹوٹ گیا جس سے دو افراد ڈوب گئے۔ پل ٹوٹنے سے استور اور اسکردو کے درمیان ٹریفک معطل ہوگیا ہے۔

Tags: ·

نجی ائیر لائن کا طیارہ ایئر بلیو مارگلہ پہاڑیوں کے قریب گر کر تباہ ہو گیا ‘ 152 مسافر جاں بحق ۔۔اپ ڈیٹ

July 28th, 2010 · 3 Comments · بریکنگ نیوز, پاکستان

اسلام آباد ‘ کراچی سے اسلام آباد پہنچنے والا نجی ائیرلائن کا طیارہ ایئر بلیو مارگلہ پہاڑیوں کے قریب گر کر تباہ ہو گیا ہے جس کے نتیجے میں جہاز میں سوار 146 مسافر اور عملے کے 6 ارکان سمیت 152 مسافر جاں بحق ہو گئے ۔تفصیلات کے مطابق ترکی سے براستہ کراچی سے اسلام آباد پہنچنے والا نجی ائیرلائن کا طیارہ ایئر بلیو ( ائیر بس تھری ٹونٹی ) موسم کی خرابی کے باعث مارگلہ کی پہاڑی پر گر کر تباہ ہو گیا۔۔ جس کے نتیجے میں اس میں سوار تمام مسافر جاں بحق ہو گئے ہیں۔اطلاعات کے مطابق جہاز میں 146 مسافر جبکہ عملے کے 6 ارکان شامل تھے جو کہ تمام کے تمام جاں بحق ہو گئے ہیں۔اس سے پیشتر وزیر داخلہ رحمان ملک نے 5 مسافروں کے زندہ بچ جانے کی اطلاع دی تھی جس کی بعد میں انہوں نے تردید کر دی۔۔جاں بحق ہونے والوں میں عورتیں اور بچے بھی شامل ہیں۔

Tags: ··

نجی ائیر لائن کا طیارہ مارگلہ پہاڑیوں کے قریب گر کر تباہ ہو گیا

July 28th, 2010 · No Comments · بریکنگ نیوز, پاکستان

اسلام آباد ‘ ایک نجی ائیر لائن کا طیارہ اسلام آباد مارگلہ پہاڑیوں کے قریب گر کر تباہ ہو گیا ہے ۔طیارے میں 157 افراد سوار تھے ۔طیارہ کراچی سے اسلام آباد کیلئے صبح سات بجکر پچاس منٹ پر روانہ ہوا تھا اور اسے نو بجکر تیس منٹ پر اسلام آباد کے ائیر پورٹ پر لینڈ کرنا تھا مگر یہ مارگلہ کی پہاڑیوں کے قریب دامن کوہ میں گر کر تباہ ہو گیا۔جہاز کے ملبے سے10 لاشیں اور5 افراد کو زندہ نکال لیا گیاہے اور امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔وزیر داخلہ رحمان ملک نے 5 افراد کے زندہ نکالنے کی تصدیق کر دی ہے

Tags: ·

سرگودھا ضمنی انتخابات ‘ عوام نے دونوں بڑی پارٹیوں کو مسترد کر دیا ‘ آزاد امیدوار اعجاز احمد کاہلوں نے واضع برتری حاصل کر کے میدان مار لیا

July 26th, 2010 · No Comments · بریکنگ نیوز, پاکستان

سرگودھا ‘ سرگودھا کے حلقے پی پی ٣٤ صوبائی اسمبلی کے ضمنی انتخابات میں غیر سرکاری اور غیر حتمیٰ نتائج کے مطابق آزاد امیدوار اعجاز احمد کاہلوں نے واضع اکثریت سے کامیابی حاصل کر لی ہے ۔اطلاعات کے مطابق سرگودھا کے حلقے پی پی ٣٤ صوبائی اسمبلی کے ضمنی انتخابات میں آزاد امیدوار اعجاز احمد کاہلوں نے مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کے امیدواروں کو بچھاڑ کر واضع برتری حاصل کر لی ۔اعجاز احمد کاہلوں ١٥٩٦٧ ووٹ حاصل کر کے پہلے نمبر پر رہے جبکہ دوسرے نمبر پر مسلم لیگ (ن) کے امیدوار تبریز گل اور تیسرے نمبر پر پیپلز پارٹی کے امیدوار رہے

Tags: ·

بغداد میں العربیہ ٹی وی چینل کے دفتر پر خود کش کار بم حملہ، 5 افراد زخمی

July 26th, 2010 · No Comments · دنیا کی خبریں

بغداد ۔ 26 جولائی (اے پی پی ، نیوز اردو ڈاٹ نیٹ)بغداد میں العربیہ ٹی وی چینل کے دفتر پر خود کش کار بم حملہ کے نتیجہ میں 5 افراد زخمی ہو گئے۔ عراقی وزارت داخلہ کے مطابق عراق میں دہشت گردی کے ایک اور واقعہ میں پیر کی صبح خود کش حملہ آور نے العربیہ ٹی وی چینل کے دفتر کے سامنے دھماکہ خیز مواد سے بھری گاڑی سمیت خود کو اڑا دیا۔

Tags: ·

اونچی ایڑی والے جوتوں کا استعمال پنڈلی کیلئے نقصان دہ ہے۔ رپورٹ

July 26th, 2010 · No Comments · صحت

لندن ۔ 26 جولائی (اے پی پی ، نیوز اردو ڈاٹ نیٹ) اونچی ایڑی والے جوتے استعمال کرنے والی عورتوں کی پنڈلی کے پٹھوں کو نقصان پہنچتا ہے جس کے بعد وہ فلیٹ جوتے میں بھی چل پھر نہیں سکتیں، اس طرح کے جوتوں سے پٹھوں میں کھچاؤ پیدا ہو جاتا ہے جو کہ درد اور بے آرامی کا باعث بنتا ہے۔ بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے بتایا کہ جو عورتیں دو سال تک ہفتے میں پانچ دن اونچی ایڑی کی جوتیاں استعمال کرتی ہیں 13 فیصد ایسی عورتوں کے پٹھوں میں کھچاؤ پیدا ہو جاتا ہے۔ سائنسدانوں کے مطابق ایسی کیفیت سے بچے کا واحد حل پٹھوں میں لچک پیدا کرنے والی ورزشیں ہیں۔ اونچی ایڑی والے جوتوں کے استعمال سے گھٹنے اور ٹخنے کا درمیانی فاصلہ کم ہو جاتا ہے لیکن اگر اونچی ایڑی والے جوتوں کا مسلسل استعمال کیا جائے تو پٹھے مستقل طور پر کمزور اور سکڑ جاتے ہیں جس کے نتیجہ میں ایسی عورتیں جب فلیٹ جوتوں میں بھی چلنے کی کوشش کرتی ہیں تو ان کے پٹھوں میں کھچاؤ پیدا ہوتا ہے جس سے وہ بے آرامی اور درد محسوس کرتی ہیں۔

Tags: ·