پاکستانی کرکٹ کھلاڑیوں کی جوا بازی ‘ ڈیڑھ لاکھ پاوٴنڈ برآمد ‘ ایک شخص گرفتار

لندن ‘ پاکستان کرکٹ ٹیم کی لارڈز ٹسٹ میں ذلت آمیز شکست سے پہلے ہی ایک برطانوی اخبار ”نیوز آف دی ورلڈ“ نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان سمیت کئی کھلاڑی لارڈز ٹیسٹ میچ فکس کرنے میں ملوث ہیں ۔اخبار نے یہ بھی کہا ہے کہ میچ فکسنگ کی ویڈیو جلد جاری کی جائے گی ۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ الزامات کے بعد سکاٹ لینڈ یارڈ نے پاکستانی کرکٹرز کے کمروں میں چھاپہ مارکر ڈیڑھ لاکھ پاوٴنڈ، موبائل فونز اور کمپیوٹر برآمد کر لیے جبکہ ایک شخص کو گرفتار کرلیا گیا ہے، اسکاٹ لینڈ یارڈ نے میچ فکسنگ میں ملوث 7کھلاڑیوں کے پاسپورٹ بھی طلب کر لیے ہیں۔ اتوار کو برطانوی اخبارنے اپنی ایک رپورٹ میں دعوی کیا ہے کہ اس کے ایک رپورٹر نے ڈیڑھ لاکھ ڈالر اس شخص کو دیئے جس نے یقین دلایا کہ پاکستانی بالر چوتھے ٹیسٹ میچ کے دوران پہلے سے مخصوص موقعوں پر نو بالز کرائیں گے۔برطانوی اخبار نے الزام لگایا ہے کہ پاکستان کھلاڑیوں کو خفیہ طور پر پیسے دئیے گئے تاکہ وہ دانستہ طور پر ٹیسٹ کے دوران نو بالز کرائیں۔اخبار نے کہا کہ اس کی رپورٹنگ ٹیم کے ارکان نے مشرقی بعید کے بزنس مینوں کا روپ دہار کر ایک شخص کو پیسے دیئے جس نے انھیں دوسرے دن کے کھیل کے بارے میں ٹھیک ٹھیک معلومات فراہم کیں ۔دوسری جانب قائمہ کمیٹی برائے کھیل نے مطالبہ کیا ہے کہ میچ فکسنگ میں ملوث تمام کھلاڑیوں پر تاحیات پابندی عائد کر کے جیل بھیجا جائے۔

Share

2 Comments to "پاکستانی کرکٹ کھلاڑیوں کی جوا بازی ‘ ڈیڑھ لاکھ پاوٴنڈ برآمد ‘ ایک شخص گرفتار"

  1. شاہد مسعود احمد's Gravatar شاہد مسعود احمد
    August 29, 2010 - 12:58 pm | Permalink

    جوا جو کسی کا نہ ھوا ؟؟؟؟؟ اج کل تو ہر کوئی جو ا ھی کھیل رھا ھے سیاست بھی تو جو ا ھے لاکھوں لگاو اور کروڑوں کماو کاروبار بھی تو جو ا ھے مال گودام میں ڈال دو رمضان کا مبارک مہنہ ائے تو خوب کماو حکومت میں کون ہے جو ایمانداری کا دعوی کرسکے اب رہے کریکٹر تو وہ بھی پاکستانی ہیں جیسا ماحول ہوگا ویسے ھی وہ ھوں گے ہر طرف اندھیر نگری کا راج ہے تو وہ بھی پاونڈ کمانے برطانیہ گیے ہیں وہ وھاں جاکر جوا کھلیں یا شراب خانے جائیں کون پوچھہ سکتا ہے ان سے ہر کوئی اپنی اپنی قیمت لگا رھا ہے سب بکاو مال ہیں ہم ڈالر کے بدلے تو ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ بھی بیچ دیں گئے یاد کرو امریکی وکیل کا بیان اور جھوم گاو بےغیرتی سے۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔

  2. شہزاد ندیم لیہ's Gravatar شہزاد ندیم لیہ
    August 30, 2010 - 10:06 pm | Permalink

    کھلاڑیوں کے ساتھ ساتھ مینیجمنٹ کی باز پرس کی جائے کیونکہ ان کی مرضی اور اجازت کے بغیر یہ کام زیادہ عرصے تک نہیں چل سکتا تھا ۔ یہ بات قابل افسوسناک اور حیرت انگیز ہے کہ عمر امین اور وہاب ریاض جیسے کرکٹر جنہیں پہلی مرتبہ ٹیسٹ کیپ ملی وہ ایسے کاموں میں کیسے شریک ٹھہرائے گئے ضرور اس مین دال میں کچھ کالا ہے ۔ شائقین صبر کریں اور وقت کا انتظار کریں دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا۔

Leave a Reply