سولہویں ایشین گیمز آج سے چین کے شہرگوانگزو میں شروع ہو گئیں


گوانگزو‘ سولہویں ایشین گیمز آج سے چین کے شہرگوانگزومیں شروع ہورہے ہیں۔ گیمزمیں پینتالیس ممالک کے بارہ ہزارسے زائد ایتھلیٹس اورآفیشلزشرکت کریں گے۔ کئی سال کی محنت اورکروڑں ڈالرزکی انویسمنٹ کے بعد گوانگزوسولہویں ایشین گیمزکی میزبانی کیلئے پوری طرح تیارہے۔ ایشین گیمزچین میں دوہزارآٹھ کے بیجنگ اولمپکس کے بعد کھیلوں کا سب سے بڑا ایونٹ ہے۔ ایک کروڑآبادی والے شہرگوانگزو میں گیمزکیلئے بارہ نئے وینیوزتعمیرکئے گئے ہیں جبکہ اٹھاون وینیوزکی تزئین وآرائش کی گئی ہے۔ ستائیس نومبرتک جاری رہنے والے ایونٹ میں پینتالیس ممالک کے بارہ ہزارسے زائد ایتھلیٹس شرکت کررہے ہیں جوبیالیس کھیلوں میں میڈلزکیلئے قسمت آزمائی کریں گے۔ کرکٹ، ڈانس اسپورت، ڈریگن بوٹ، رولراسپورٹس اورشطرنج کوپہلی مرتبہ ایشین گیمزمیں شامل کیا گیا ہے۔ ایشین گیمزمیں میزبان ملک چین کا چودہ سوچوون رکنی دستہ حصہ لے گا جس میں پینتیس اولمپک گولڈ میڈلسٹ شامل ہیں۔ چین نے دوہزارچھ میں دوحہ میں ہونے والے ایشین گیمزمیں ایک سوچھیاسٹھ طلائی تمغوں سمیت تین سوسولہ میڈلز جیتے تھے۔ گوانگزوایشین گیمزمیں پاکستان کا دوسوبتیس رکنی دستہ سترہ ایونٹس میں حصہ لے گا۔ پاکستان کے کرکٹ، ہاکی، باکسنگ، اسکواش اورریسلنگ میں گولڈ میڈلزجیتنے کے امکانات ہیں۔پاکستان نے گزشتہ ایشین گیمزمیں صرف ایک چاندی اورتین کانسی کے تمغے جیتے تھے۔ ایشین گیمزکی افتتاحی تقریب جمعے کو Xaixinsha Square پرہوگی جس میں صدرپاکستان آصف علی زرداری بھی شرکت کریں گے۔ منتظمین نے گیمزکے دوران ایتھلیٹس کی حفاظت کیلئے سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے ہیں

Share

Leave a Reply