Urdu News

Urdu News…The 3rd Largest Online Urdu Newspaper

Urdu News header image 4

Entries Tagged as 'افغانستان'

افغان جنگ میں گزشتہ سال اوسطاً روزانہ 2 بچے ہلاک ہوئے،افغان رائٹس مانیٹر کی رپورٹ

February 10th, 2011 · No Comments · افغانستان

۔64 فیصد بچوں کی ہلاکتوں کی ذمہ دار ،17 فیصد نیٹو افواج اور 4 فیصد افغان فورسز ہیں
افغان حکومت بچوں کے تحفظ کے حوالے سے اقدامات یقینی بنائے، تنظیم کا مطالبہ

کابل‘ افغان رائٹس مانیٹر(اے آر ایم) نے اپنی رپورٹ میں گزشتہ سال 2010ء میں بچوں کی بڑھتی ہوئی ہلاکتوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ روزانہ دو بچے ہلاک ہو جاتے تھے اور دو تہائی بچوں کی ہلاکتوں کے ذمہ دار طالبان عسکریت پسند ہیں(اے آرایم ) کے مطابق افغانستان میں طالبان کے خلاف جنگ میں گزشتہ سال یکم جنوری سے لے کر 31 دسمبر 2010ء تک 739 بچے ہلاک ہوئے ہیں ) جن میں 64 فیصد بچے طالبان کی جانب سے سڑک کنارے نصب بم حملوں کا نشانہ بنے۔سڑک کنارے نصب بم حملوں سے نیٹو فوج بھی زیادہ تر نشانہ بنتے ہیں بلکہ ان کی ہلاکتوں کی ایک وجہ سڑک کنارے نصب بم حملے بھی ہیں۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 17 فیصد بچوں کی ہلاکتوں کی ذمہ د ار افغانستان میں ایک لاکھ 40 ہزار نیٹو افواج جبکہ 4 فیصد افغان فورسز بھی ہیں۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ افغانستان میں شہریوں کی ہلاکتیں ایک حساس معاملہ بن چکا ہے کیونکہ شہریوں کی ہلاکتیں اب معمول کا حصہ بن گئی ہیں۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سال 2010ء بچوں کی ہلاکتوں کی وجہ سے اچھا سال نہیں رہا۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ افغانستان کے شمالی صوبہ پنج شیر اور وسطیٰ صوبہ بامیان بچوں کے حوالے سے محفوظ صوبے رہے ہیں۔ رپورٹ میں بچوں کی گزشتہ سال کی ہلاکتوں پر تشویش کا اظہار کیا گیا ہے اور مطالبہ کیا گیا ہے کہ افغان حکومت بچوں کے تحفظ کے حوالے سے اقدامات یقینی بنائے جائیں۔

Tags:

جنوبی افغانستان میں بم حملے ، 2 نیٹو فوجی ہلاک

February 8th, 2011 · No Comments · افغانستان

کابل ‘ جنوبی افغانستان میں دیسی ساختہ بم حملوں کے نتیجے میں نیٹو کے 2 فوجی ہلاک ہو گئے ۔ فوجی اہلکاروں کی قومیت کے بارے میں فوری طور پر معلوم نہیں ہو سکا ۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق منگل کو علی الصبح جنوبی افغانستان میں دیسی ساختہ بم کا زوردار دھماکہ ہوا جس کی زد میں آ کر نیٹو کے دو فوجی موقع پر ہلاک ہوگئے ۔دونوں فوجیوں کی شہریت کے بارے میں فوری طور پر معلوم نہیں ہو سکا ۔ واضح رہے کہ رواں سال کے آغاز سے اب تک 38 نیٹو فوجی ہلاک ہو چکے ہیں ۔

Tags:

قندھار میں خودکش حملہ ، نائب گورنر عبدالطیف جاں بحق

January 29th, 2011 · No Comments · افغانستان

کابل ‘ افغانستان میں ایک خود کش حملہ نے آور ہفتے کو جنوبی صوبے قندھار کے نائب گورنر عبدالطیف آشنا کو ہلاک کر دیا ہے۔افغانستان کی وزارتِ داخلہ کے ترجمان ضمیری بشیری نے کہا ہے کہ خود کش بمبار ایک موٹر سائیکل پر سوار تھا اور اس نے قندھار شہر میں گونر کے قافلے سے اپنے موٹر سائیکل ٹکرا دی جس میں گورنر کے کئی محافظ زخمی بھی ہو گئے ہیں۔طالبان کی طرف سے شدید مزاحمت کے پیش نظر گزشتہ کئی مہینوں سے افغان اور غیر ملکی افواج نے قندھار میں اپنی کارروائیاں تیز کر دی ہیں۔افغانستان میں امریکی سفیر کارل ایکنبری نے قندھار کے دورے کے دوران کہا ہے کہ طالبان کے حملوں سے اتحادی فوج اور افغان سیکورٹی فورسز اپنی کارروائیاں ختم نہیں کریں گی۔ صوبہ قندھار میں خودکش بم حملہ اس وقت ہوا جب نائب گورنر عبدالطیف آشنا اپنے گھر جا رہے تھے کہ موٹر سائیکل پر سوار خودکش حملہ آور نے خود کو بم سے اڑا دیا ۔ صوبائی گورنر کے ترجمان زلمے ایوبی کا کہنا ہے کہ خودکش حملے کے نتیجے میں دیگر 5 افراد بھی زخمی ہو گئے ۔ جنہیں قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا ۔ زخمیوں میں 3 کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے ۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ حملہ آور کا ہدف نائب گورنر عبدالطیف آشنا ہی تھے ۔ افغانستان کے لئے امریکہ کے سفیر کرل اپیکینری نے قندھار میں جائے وقوع کا دورہ کیا اور نائب گورنر کی ہلاکت پر افسوس کا اظہار بھی کیا

Tags:

افغانستان کے دارالحکومت میں دھماکے8 افراد ہلاک ،3 زخمی

January 28th, 2011 · No Comments · افغانستان

کابل ‘ افغانستان کے دارالحکومت کابل کی سپرمارکیٹ میں دھماکے سے 3غیر ملکی خواتین سمیت 8افراد ہلاک اور 3زخمی ہوگئے ہیں بڑی تعداد میں غیر ملکی اس مارکیٹ میں آتے ہیں یہ مارکیٹ برطانوی سفارتخانے کے قریب واقع ہے۔پولیس کے مطابق یہ ایک خود کش حملہ تھا طالبان نے دھماکے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔

Tags:

پاکستان اور افغانستان کا خطے میں امن و استحکام کے لئے وزراء خارجہ سطح کا مشترکہ کمیشن بنانے پر اتفاق

January 27th, 2011 · No Comments · افغانستان, پاکستان

افغان جیلوں میں پاکستانی قیدیوں کے مسئلے کو حل کرنے کے لئے میکانزم بنایا جائے گا
دونوں ممالک مل کر دوطرفہ تعلقات کا نیا باب رقم کریں گے
افغانستان اور پاکستان ایک دوسرے کے لئے لازم و ملزوم ہیں ، مسئلے کے حل کے لئے علاقائی سوچ اپنائی جائے
وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا اپنے افغان ہم منصب زلمے رسول کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب

اسلام آباد ‘ پاکستان اور افغانستان نے خطے میں امن و استحکام کے قیام کے لئے وزراء خارجہ سطح کا مشترکہ کمیشن بنانے پر اتفاق کیا ہے جبکہ افغان جیلوں میں پاکستانی قیدیوں کے مسئلے کو حل کرنے کے لئے اپنا میکانزم بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ یہ اتفاق گزشتہ روز وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور افغان وزیر خارجہ زلمے رسول کے درمیان ہونے والی ملاقات میں کیا گیا ۔ ملاقات کے بعد دونوں رہنماؤں نے مشترکہ پریس کانفرنس سے بھی خطاب کیا ۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ افعان وزیر خارجہ نے میری دعوت پر پاکستان کا دورہ کیا ہے ۔ میری اپنے افغان ہم منصب کے ساتھ ملاقات انتہائی مفید رہی ہے جس میں مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے ۔ پاکستان اور افغانستان کے درمیان اعلیٰ سطح پر رابطے اور مشاورت کا عمل موجود ہے ۔ ملاقات میں ہم نے پاک افغان مشترکہ مقاصد کے حصول کے لئے مل کر آگے بڑھنے پر اتفاق کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملاقات باہمی اعتماد کے فروغ کے لئے اہم رہی ہے ۔ ہم مل کر پاک افغان دوطرفہ تعلقات کا نیا باب رقم کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ملاقات میں واشنگٹن میں آئندہ ماہ ہونے والے سہہ فریقی اجلاس ، پاک افغان ٹرانزٹ ٹریڈ معاہدے پر بھی تفصیلی بات ہوئی ہے جبکہ دونوں ممالک نے پلاننگ کمیشن اور افغان وزارت معیشت کا مشترکہ اجلاس بلانے پر بھی اتفاق کیا ہے جس میں افغانستان اور پاکستان کی معاشرتی و معاشی ترقی کے لئے مل کر آگے بڑھنے پر بات کی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ملاقات ان تمام شعبوں پر بات ہوئی ہے جن میں دونوں ممالک مل کر فوائد حاصل کر سکتے ہیں ان شعبوں میں خصوصاً زراعت ، توانائی ، معدنیات ، ووکیشنل ٹریننگ سنٹرز کے قیام ، خصوصی سرمایہ کاری زونز اور دہشت گردی کے خاتمے پر بات کی گئی ہے جبکہ افغانستان میں مفاہمتی عمل پر بھی بات ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک نے خطے میں امن و استحکام کے لئے وزارت خارجہ سطح کے مشترکہ کمیشن بنانے پر اتفاق کیا ہے ۔ جس میں وزارت خارجہ ، مسلح افواج اور انٹیلی جنس کے اداروں کے حکام شامل ہوں گے ۔ وزیر خارجہ نے بتایا کہ افغان جیلوں میں پاکستانی قیدیوں کا مسئلہ بھی اٹھایا گیا ہے ۔ اس حوالے سے ایک میکانزم بنانے پر اتفاق ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاک افغان تعلقات درست سمت میں آگے بڑھ رہے ہیں اور دونوں ممالک کے درمیان اعتماد بحال ہو رہا ہے ۔ افغان وزیر خارجہ زلمے رسول نے اس موقع پر کہا کہ مجھے پاکستان آنے پر خوشی ہے میں نے یہ دورہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی دعوت پر کیا ہے ۔ ہماری بات چیت مثبت انداز میں ہوئی ہے ۔ میرے دورے سے دونوں ممالک کے درمیان خوشگوار تعلقات کا نیا باب شروع ہو گا انہوں نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ پاکستان اور افعانستان کے درمیان اعتماد سازی کو فروغ مل رہا ہے اور ہم قابل بھروسہ طریقے سے آگے بڑھ رہے ہیں ایک سوال کے جواب میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان رابطوں سے ہم آہنگی بڑھے گی ۔ ہم سمجھتے ہیں کہ دونوں ممالک کی ثقافت ، عوام اور علاقے کی رسم و رواج مشترکہ ہیں اگر ہم مسائل کا حل مل کر سوچیں گے تو وہ زیادہ نتیجہ خیز ہوں گے ۔ ہم نے بات کی ہے کہ آئندہ ماہ ہونے والے سہہ فریقی اجلاس کو کس طرح مفید اور نتیجہ خیز بنایا جا سکتا ہے ۔ دونوں ممالک کے درمیان میکانزم بنا کر سیاسی رابطوں کو بڑھایا جائے گا ہمیں آگے بڑھنے کے لئے سٹریٹیجکل انداز میں ایک دوسرے کے قریب آنا ہو گا ۔ افغان وزیر خارجہ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ افغانستان کے عسکریت پسندوں میں سے جو بھی افغان آئین کو تسلیم کرتے ہوئے بات چیت چاہتا ہے اسے مفاہمتی عمل میں شامل کیا جائے گا ۔ ایک سوال پر شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان اعتماد سازی بحال ہو چکی ہے ۔ ہماری دوطرفہ روابط مضبوط ہو رہے ہیں ۔ تاہم معاشی منصوبوں کے لئے بین الاقوامی مدد درکار ہے ۔ ہم نے کاپوریٹ گروپ کو بھی افغانستان کی ترقی میں شامل کرنے پر بات کی ہے ۔ افغان وزیر خارجہ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ہم دہشت گردی کا خاتم چاہتے ہیں ۔ دہشت گردی علاقائی مسئلہ ہے سارے خطے کو اس مسئلے کے حل کے لئے مل کر کام کرنا ہو گا ۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ افغان مسئلے کے حل کے لئے مسلمان ممالک کو اس میں کردار دیا جائے ۔ مارچ کے مہینے میں جدہ میں او آئی سی کا اجلاس ہو گا ۔ جس میں افغانستان اور پاکستان بھی شرکت کریں گے ۔ ہم افغان مسئلے کے حل کے لئے علاقائی سوچ اپنانے کی حمایت کرتے ہیں ۔ افغانستان اور پاکستان کو ایک دوسرے کی ضرورت ہے دونوں ایک دوسرے کے لئے لازم و ملزوم ہیں ۔

Tags:

افغانستان میں سڑک نصب بم دھماکوں سے ہلاکتوں میں 60 فیصد اضافہ

January 27th, 2011 · No Comments · افغانستان

واشنگٹن ‘ امریکہ کی وزارت دفاع کے اعداد وشمار کے مطابق گزشتہ سال افغانستان میں سڑک میں نصب بم سے کیے جانے والے طالبان کے حملوں میں 268 امریکی فوجی ہلاک ہوئے۔ یہ تعداد 2009 ء میں پیش آنے والے ایسے واقعات میں 60 فیصد اضافے کوظاہر کرتی ہے اور حکام کا کہنا ہے کہ ا س کی وجہ افغانستان میں پچھلے سال امریکی افواج میں اضافہ ہے۔2010ء کا سال نیٹو کی زیر قیادت بین الاقوامی افواج کے لیے مہلک ترین سال ثابت ہوا جس میں مجموعی طور پر 711 غیر ملکی فوجی ہلاک ہوئے۔ ان میں دوتہائی اکثریت امریکیوں کی تھی۔ وائس آف امریکہ کے مطابق افغانستان میں طالبان عسکریت پسندوں کے خلاف لڑائی میں اس سال اب تک اطلاعات کے مطابق امریکہ اور نیٹو کے مجموعی طور پر 700 سے زائد فوجی ہلاک ہو چکے ہیں۔ ان میں دو تہائی اکثریت امریکیوں کی جبکہ سو سے زیادہ کا تعلق برطانیہ اور باقی کا نیٹو میں شامل دوسرے ملکوں سے ہے۔اس وقت ایک لاکھ پچا س ہزار سے زائد غیر ملکی فوجی افغانستان میں تعینات ہیں جن میں تقریباً ایک لاکھ امریکی ہیں۔امریکہ کی قیادت میں نو سال قبل شروع ہونے والی اس جنگ میں2010ء اتحادی افواج کے لیے مہلک ترین سال ثابت ہوا ہے، جبکہ طالبان عسکریت پسندوں کی کارروائیاں بھی اس دوران ملک کے شمال اور مغرب میں ایسے علاقوں تک پھیل گئیں ہیں جو ماضی میں نسبتاً پْر امن سمجھے جاتے تھے۔ امریکی صدر براک اوباما نے اس ماہ اپنی افغان جنگی حکمت عملی کا سالانہ جائزہ پیش کیا تھا جس میں انھوں نے افغانستان میں 30 ہزار اضافی امریکی فوجی تعینات کرنے کے فیصلے کو موثر قرار دیتے ہوئے یہ اعتراف بھی کیا تھا کہ عسکریت پسندوں کے خلاف کامیابیاں نازک ہیں جنہیں مستحکم کرنے کی ضرورت ہے۔نیٹو کمانڈروں نے بھی جنگ میں طالبان کے خلاف اہم کامیابیوں کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ تین ماہ میں تیرہ سو سے زائد طالبان رہنماؤں اور جنگجوؤں کو ہلاک جبکہ دو ہزار سے زائد کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔لیکن اقوام متحدہ کے خفیہ نقشوں کی ذرائع ابلاغ میں چھپنے والی تفصیلات کے مطابق 2010ء میں افغانستان میں سلامتی کی صورت حال مسلسل خراب ہوئی ہے ۔ ملک میں کام کرنے والی غیر سرکاری امدادی تنظیموں نے بھی امریکی انتظامیہ اور نیٹو کے دعوؤں کے برعکس صورت حال کو تشویش ناک قرار دیا ہے۔

Tags:

رواں سال افغانستان سے کچھ امریکی افواج کا انخلاء ہو گا ، سابق وزیر خارجہ کولن پاؤل

January 24th, 2011 · No Comments · افغانستان

صدر باراک اوبامہ آج قوم سے خطاب میں پاک افغان حکمت عملی اور اپنے دورہ پاکستان کے حوالے سے بھی بات کریں گے
پاکستان سے سٹرٹیجک ڈائیلاگ ، پاک افغان اور امریکہ کے سہ فریقی اجلاس اوبامہ انتظامیہ کا اہم ایجنڈا ہے ، امریکی ماہرین
واشنگٹن‘ سابق امریکی وزیر خارجہ کولن پاؤل نے کہا ہے کہ رواں سال افغانستان سے کچھ امریکی افواج کا انخلاء ہو گا جبکہ بعض ماہرین نے خیال ظاہر کیا ہے کہ صدر باراک اوبامہ آج ( منگل کو ) اپنے خطاب میں پاکستان اور افغانستان کے حوالے سے حکمت عملی پر بھی بات کریں گے ۔ امریکی نشریاتی ادارے ’’ سی این این ‘‘ کو انٹرویو دیتے ہوئے سابق وزیر خارجہ کولن پاؤل کا کہنا تھا کہ رواں سال افغانستان سے کچھ امریکی افواج کا انخلاء ہو گا ۔ اوبامہ انتظامیہ نے عزم کیا تھا کہ وہ افغانستان سے رواں سال جولائی میں کچھ افواج واپس بلائے گی اور 2014 ء تک سیکورٹی کی تمام تر ذمہ داریاں افغانستان کو سونپ دی جائے گی ۔ کولن پاؤل نے خبردار کیا کہ اگر دارالحکومت کابل میں افغان حکومت کی کارکردگی کے باوجود امریکہ افغانستان سے فوج نہیں نکالے گا تو اب تک جتنی بھی کوششیں اس نے کی ہیں وہ سب ضائع ہو جائیں گی ۔ جبکہ ماہرین نے امریکی ٹی وی ٹاک شو میں توقع ظاہر کی ہے کہ صدر باراک اوبامہ آج ( منگل کو ) قوم سے خطاب میں افغانستان اور پاکستان کے حوالے سے حکمت عملی پر بھی بات کریں گے ۔ اوبامہ قوم کو آگاہ کریں گے کہ ان کی انتظامیہ امریکہ میں ملازمتیں اور امریکہ کو مزید مضبوط بنانے کے لئے کیا ایجنڈا تشکیل دیں گے ۔ صدر قوم کو اپنے اس منصوبے سے متعلق بھی اعتماد میں لیں گے کہ افغانستان سے فوجی انخلاء کب کیسے ہو گا ۔ پاکستان اور افغانستان کے لئے امریکی حکمت کے حوالے سے خارجہ پالیسی کے ماہر بروس رائیڈل کی زیر نگرانی کمیٹی منصوبے تشکیل دے گی ۔ حالیہ حکمت عملی کے حوالے سے ماہرین کا کہنا ہے کہ 2014 ء کا سال صدر اوبامہ کا پاکستان کے دورے کا سال ہو گا ۔ پاکستان میں رواں سال دو بڑے ایونٹس ہوں گے جن میں افغانستان ، پاکستان اور امریکہ کے سہہ فریقی اجلاس اور پاکستان کے حوالے سے سٹرٹیجک ڈائیلاگ شامل ہیں جو اوبامہ انتظامیہ کا اہم ایجنڈا ہے ۔

Tags:

پاک افغان سرحد کے قریب خود کش حملہ، 4 نیٹو فوجی ہلاک، پاکستانیوں سمیت 12 افراد زخمی

January 19th, 2011 · No Comments · افغانستان, پاکستان

افغان طالبان نے ذمہ داری قبول کرلی، دھماکے کے بعد پاک افغان سرحد سیل کردیاگیا
چمن ‘ چمن سے ملحقہ پاک افغان سرحد پر باب دوستی گیٹ کے قریب افغان حدود میں خود کش حملے میں 4 نیٹو فوجی ہلاک اور12 زخمی ہوگئے ہیں ۔ دھماکے کے بعد پاک افغان سرحد سیل کردیاگیا ۔ افغان طالبان نے دھماکے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔ افغان حکام کے مطابق پاک افغان بارڈر پر باب دوستی گیٹ کے قریب پاکستان سے افغانستان داخل ہونے والے آمد ورفت کے مرکزی گیٹ پر تعینات نیٹو فورسز کے چیک پوائنٹ پر خود کش حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔جس کے نتیجے میں 4نیٹو فوجی موقع ہلاک اور نیٹو کے دو اہلکاروں سمیت 12افراد زخمی ہوگئے ۔زخمیوں میں پاکستانی بھی شامل ہیں ۔فرنٹئر کور کے مطابق خود کش حملے کے فوری بعد چمن کے ساتھ پاک افغان سرحد کو ہر قسم کی آمدو رفت کے ئے سیل کردیاگیا ہے

Tags:

افغان پشتون قبائل حکومت کے ساتھ مذاکرات نہ کریں ورنہ قتل کر دیئے جائیں گے ، طالبان کی دھمکی

November 8th, 2010 · No Comments · افغانستان, پاکستان


کابل (ثناء نیوز ) طالبان نے افغانستان کے پشتون قبائل کو دھمکی دی ہے کہ وہ افغان حکومت کی جانب سے امن مذاکرات کی دعوت کو قبول نہ کریں اگر انہوں نے مذاکرات میں شمولیت اختیار کی یا دعوت قبول کی تو انہیں قتل کر دیا جائے گا ۔ طالبان کے رہنما نے نام نہ بتانے کی شرط پر بتایا کہ کرزئی حکومت اور طالبان کے درمیان مذاکرات کی خبریں انہوں نے ریڈیو پر سنی ۔ ان کا کہنا تھا کہ طالبان کا کوئی گروہ بھی افغان حکومت کے ساتھ مذاکرات میں ملوث نہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ کوئٹہ شوریٰ سے مل کر آئے ہیں وہاں بھی کوئی افغان حکومت کے ساتھ امن مذاکرات کا حصہ نہیں لیکن انہوں نے کہا کہ اگر کوئی افغان پشتون قبائل حکومت کے ساتھ مذاکرات میں شمولیت اختیار کرتا ہے تو انہیں خطرناک نتائج بھگتنا پڑیں گے اور انہیں قتل کا نشانہ بنایا جائے گا ۔

Tags:

افغانستان ‘ پر تشدد واقعات میں 6 اتحادی فوجی ہلاک

November 6th, 2010 · No Comments · افغانستان


کابل‘ افغانستان میں تشدد کے واقعات میں مزید 6 اتحادی فوجیوں کی ہلاکت کی تصدیق کی گئی ہے، اتحادی فوج نے مشرقی افغانستان میں متعدد جنگجوؤں کو ہلا کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ افغان ذرائع ابلاغ کے مطابق مزاحمت کاروں کی مختلف کارروائیوں کے دوران گزشتہ 48گھنٹوں میں 6 اتحادی فوجی مارے گئے جس کے بعد رواں برس ہلاک ہونے والے اتحادی فوجیوں کی تعداد 622ہوگئی ہے۔ کابل میں ایساف کے ترجمان نے تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ 2اتحادی فوجی جنوبی افغانستان میں عسکریت پسندوں کے حملہ میں ہلاک ہوئے جبکہ ایک فوجی افغانستان کے مشرقی علاقے میں سڑک کنارے نصب بم کی زد میں آنے سے ہلاک ہوا۔ ترجمان کے مطابق ایک روزقبل بھی طالبان کے حملوں میں 3اتحادی فوجی ہلاک ہوئے‘ تاہم ترجمان نے ہلاک ہونے والے اتحادی فوجیوں کی قومیت سے آگاہ نہیں کیا۔ دریں اثناء مشرقی صوبہ خوست میں نیٹو فضائیہ نے سڑک کے کنارے بم نصب کرنے والے طالبان پر اچانک بمباری کرکے حقانی گروپ کے سینئر کمانڈر سمیت کئی جنگجوؤں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

Tags: