Urdu News – Online Urdu News Paper

Urdu News, Online Urdu Latest News Pakistan & World Newspaper

Urdu News – Online Urdu News Paper header image 4
Pages: 1 2 Next

سپریم کورٹ نے خواجہ سراؤں کے مفت علاج اور تعلیمی سہولیات فراہم کرنے کا حکم جاری کر دیا

August 17th, 2009 · No Comments

اسلام آباد۔ سپریم کورٹ آف پاکستان نے ایڈز اور ہیپاٹائٹس جیسے وبائی امراض میں مبتلاخواجہ سراؤں کے مفت علاج اور تعلیمی سہولیات فراہم کرنے کا حکم جاری کر دیا ہے۔ پیر کے روز ایڈووکیٹ اسلم خاکی کی طرف سے خواجہ سراوں کے حقوق کی لئے دائر کی گئی درخواست کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں جسٹس اعجاز احمد چوھدری اور جسٹس غلام ربانی پر مشتمل تین رکنی بینچ نے کی۔ سماعت کے دوران چیف جسٹس آف پاکستا ن جسٹس افتخار محمد چوہدری نے چاروں صوبائی حکومتوں کوہدایت کی کہ وہ خواجہ سراؤں کو پاکستانی شہری ہونے کی حیثیت سے ان کے آئینی حقوق کی فراہمی یقینی بنائیں ۔عدالت عظمی نے صوبائی اور ضلعی سطحح پر ان کی حفاظت کے لیے نمائندے مقرر کرنے کا حکم بھی دیا ہے۔ چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں کہا خواجہ سرا اللہ تعالیٰ کی مخلوق اور پاکستانی شہری ہیں اور آئین نے ہر شہری کو جو حقوق فراہم کئے ہیں وہ انہیں بھی دیئے جانے چاہئیں۔ چیف جسٹس نے چاروں صوبوں کو ہدایت کی کہ وہ ان افراد کی رجسٹریشن کا عمل جلد مکمل کریں۔ سپریم کورٹ میں صوبائی حکومتوں کی طرف سے خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن کے حوالے سے رپورٹ جمع کرائی گئی جس کے مطابق پنجاب میں 2167 بلوچستان میں 56 سرحد میں 324 خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن کی گئی ہے ۔ سپریم کورٹ نے حکومت سندھ کو ایک ماہ کے اندر اعداد و شمار کی رپورٹ جمع کرانے کی مہلت دیتے ہوئے مقدمہ کی سماعت دو ماہ کے لیے ملتوی کر دی

Tags: , , , ,

اوپر والی خبر سے ملتی جلتی خبریں دیکھیں

Tags: Pakistan , Urdu , Urdu News

مالاکنڈ آپریشن ، متاثر ہونے والے خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن شروع

August 6th, 2009 · No Comments

چوبیس اضلاع میں دیر بالا اور دیر لوئر میں کوئی خواجہ سرا نہیں

پشاور ۔ مالاکنڈ ڈویژن میں آپریشن سے متاثر ہونے والے خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن شروع ہو گئی ہے ۔ صوبے کے چوبیس اضلاع میں دیر لوئر اور دیر بالا میں کوئی خواجہ سرا نہیں ۔ سپریم کورٹ آف پاکستان کے احکامات کی روشنی میں پشاور سمیت صوبے بھر میں خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن کی جا رہی ہے ۔ سوشل ویلفیئر ڈیپارٹمنٹ کے ذریعے خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن کا سلسلہ جاری ہے ۔ صوبے کے چوبیس اضلاع میں خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن کے لئے خصوصی سنٹرز کھول دیئے تھے ۔ مالاکنڈ ڈویژن سے نقل مکانی کرنے والے خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن کا سلسلہ بھی پشاور میں شروع ہو گیا ہے ۔ سوشل ویلفیئر ڈیپارٹمنٹ کے مطابق اب تک دو سو سے زائد خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن کاسلسلہ مکمل ہو چکا ہے ۔ صوبے کے چوبیس اضلاع میں پانچ اضلاع میں خواجہ سر اؤں کی رجسٹریشن تاحال شروع نہیں ہو سکی ۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ ان پانچ اضلاع میں خواجہ سراؤں کی تعداد نہ ہونے پر یایہاں پر نقل مکانی سے ان کی رجسٹریشن نہیں ہو رہی ہے

Tags: , , ,

اوپر والی خبر سے ملتی جلتی خبریں دیکھیں

Tags: Pakistan , Urdu , Urdu News

خواجہ سرا ملک کے شہر ی ہیں بنیادی حقوق کی فراہمی ریاست کی ذمہ داری ہے ۔۔۔سپریم کورٹ

July 14th, 2009 · No Comments

اسلام آباد ۔ سپریم کورٹ نے حکومت کو حکم دیا ہے کہ خواجہ سراؤں کو بنیادی حقوق کی فراہمی یقینی بناتے ہوئے انہیں مکمل تحفظ فراہم کیا جائے۔ملک کے شہریوں کے بنیادی حقوق کی خلاف ورزی کو روکنے کے لئے اقدامات کیے جائیں۔منگل کے روز چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سر براہی میں جسٹس جواد ایس خواجہ اور جسٹس سائر علی پر مشتمل تین رکنی بینچ نے محمد اسلم خاکی ایڈووکیٹ کی درخواست کی سماعت کی۔ سماعت کے دوران محمد اسلم ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ خواجہ سرا ہمارے معاشرے میں انتہائی کسمپرسی کی حالت میں زندگی گزار رہے ہیں ان کو زندگی کی کوئی بنیادی سہولت حاصل نہیں ہے والدین انہیں گھروں سے نکال دیتے ہیں چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے خواجہ سرا ملک کے شہری ہیں ان کو بنیادی حقوق کی فراہمی ریاست کی ذمہ داری ہے ۔یہ ملک کے شہری ہیں ان کے تمام شعبوں میں حقوق ہیں والدین اور حکومت انہیں سڑکوں پر ڈانس کر نے کے لئے نہ چھوڑیں عدالت نے خواجہ سرا سے استفسار کیا کہ ان کے والدین ان سے محبت کیوں نہیں کرتے جس کے جواب میں خواجہ سرا کا کہنا تھا کہ ہماری مائیں اور بہنیں ہم سے محبت کرتی ہیں لیکن باپ اور بھائی اچھا نہیں سمجھتے اس لئے ہمیں گھروں سے نکال دیا جاتا ہے ہم سے گرو اور غنڈے بھتہ وصول کرتے ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ انہیں شناختی کارڈ کے حصول میں بھی مشکلات کا سامنا کر نا پڑتا ہے ان کا کہنا تھا کہ وہ خدا کی پیدا کی ہوئی مخلوق ہیں اگر عام انسانوں کو ہم سے شکوہ ہے تو وہ خدا سے پوچھیں کہ ہمیں کیوں پیدا کیا ہم بھی باعزت شہریوں کی طرح زندگی گزارنا چاہتے ہیں اس موقع پر اسلم خاکی ایڈووکیٹ نے عدالت سے استدعا کی۔ عدالتی کمیشن تشکیل دیا جائے جو خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن اور ان کو در پیش مسائل کے حوالے سے تحقیقات کرے ۔اسلم خاکی نے عدالت کو تجویز دیتے ہوئے کہا کہ اس حوالے سے ضلعی سطح پر کمیٹیاں تشکیل دی جائیں عدالت نے حکومت کو ہدایت کر تے ہوئے کہا کہ پاکستان ویلفیئر سٹیٹ ہے اور حکومت کی ذمہ داری ہے کہ ملک کے ان شہریوں کو جائز مقام دلانے کے لئے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام ،بیت المال یا صوبائی انکم سپورٹ کے دوسرے پروگرامات کے ذریعے مالی معاونت فراہم کی جائے یا ان کو باعزت روز گار فراہم کیا جائے تا کہ آہستہ آہستہ معاشی بحالی سے ان کے مسائل کم ہو سکیں ۔عدالت نے ہدایت کی کہ اس عدالتی فیصلے کی نقول وفاقی و صوبائی حکومتوں کو فراہم کی جائیں عدالت نے صوبائی حکومتوں کو خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن کے بارے میں تفصیلی رپورٹس میں عدالت عظمیٰ میں جمع کر انے کی ہدایت کرتے ہوئے حکم دیا کہ صوبائی سیکرٹری برائے سماجی بہبود ان کی رجسٹریشن کو فوری طور پر یقینی بنایا جائے ۔عدالت نے خواجہ سراؤں کو تحفظ فراہم کرنے کا بھی حکم دیا اور کہا کہ ان کے بنیادی حقوق کی خلاف ورزی نہیں ہو نی چاہیے۔عدالت نے چاروں صوبائی سماجی بہبود کے سیکرٹریز سے خواجہ سراؤں کی بہبود کے حوالے سے تجاویز بھی طلب کر لی ہیں۔چیف جسٹس نے اس موقع پر کہا کہ جو والدین اپنے ایسے بچوں کو قبول نہیں کرتے وہ اپنے دینی،اخلاقی اور قانونی فرض سے روگردانی کرتے ہیں انسان ہو نے کے ناطے والدین اس بات کے پابند ہیں کہ وہ ان کی حفاظت اور پرورش دوسرے بچوں کی طرح کریں۔عدالت نے چاروں صوبائی حکومتوں کو اس حوالے سے تفصیلی رپورٹس آئندہ سماعت پر پیش کر نے کی ہدایت کر تے ہوئے مقدمہ کی سماعت اگست کے تیسرے ہفتہ تک ملتوی کر دی

Tags: , , , ,

اوپر والی خبر سے ملتی جلتی خبریں دیکھیں

Tags: Pakistan , Urdu , Urdu News

سپریم کورٹ آف پاکستان نے خواجہ سراؤں کے بارے میں ملک گیر رجسٹریشن کرانے کا حکم دے دیا

June 16th, 2009 · No Comments

اسلام آباد ۔سپریم کورٹ آف پاکستان نے خواجہ سراؤں کے بارے میں ملک گیر سروے کرانے کاحکم دیا ہے اور کہاہے کہ اس کی وجوہات بھی سرکاری محکمے میں درج کرائیں ۔ چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے خواجہ سراؤں کے حقوق سے متعلق مفاد عامہ کے مقدمے کی سماعت کی ۔ چیف جسٹس نے ہدایت کی کہ صوبائی محکمہ سماجی بہبود کے ذریعے خواجہ سراؤں کے بارے میں جامع معلومات مرتب کی جائیں مقدمے کی درخواست وکیل اسلم خاکی نے عدالت کی توجہ خواجہ سراؤں کے حقوق اور معاشرے میں موجود گرو جیسی شخصیات کی جانب مبذول کرائی عدالت نے ہدایت کی کہ جب والدین خواجہ سرا بچہ کسی گرو کو دیں تو اس وقت اس کی وجوہات بھی محکمہ سماجی بہبود کو بتائیں بعدمیں عدالت نے مقدمے کی سماعت چار ہفتوں کیلئے ملتوی کر دی ہے

Tags: , , ,

اوپر والی خبر سے ملتی جلتی خبریں دیکھیں

Tags: Pakistan , Urdu , Urdu News

مظفرپور میں 3 ہیجڑوں کے قتل میں ملوث بلال چیمہ امریکہ فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا

February 6th, 2009 · No Comments

بلال چیمہ ضلع ناظم اٹک میجر(ر) طاہر صادق کا داماد اور سابق صوبائی وزیر اجمل چیمہ کا بیٹا ہے

ملزم ہیجڑوں سے بدفعلی اور ویڈیو بناتا رہا ہے ، سیاسی اثرو رسوخ اور چوہدری برادران سے وابستگی کے باعث مقدمہ نہ چلایا جا سکا

ملزم کی امریکہ سے واپسی کیلئے پولیس انٹرپول سے رابطہ کرے گی ۔ خصوصی رپورٹ

سیالکوٹ۔ مظفر پور میں بدفعلی کے بعد تین ہیجڑوں کے اندھے قتل میں ملوث سیالکوٹ کے ضلعی ناظم محمد اکمل چیمہ کا بھتیجا، سابق صوبائی وزیر چوہدری اجمل چیمہ کا بیٹا اور میجر (ر)صادق کا داماد بلال چیمہ امریکہ فرار ہو گیا۔ پولیس نے ملزم کے خلاف تمام ثبوت اکٹھے کر لئے تاہم سیاسی اثر ورسوخ اور چوہدری برادران سے سیاسی وابستگی کے باعث ملزم پرمقدمہ نہ چلایا جا سکا۔ ملزمان کو بچانے کے لئے مسلم لیگ ق کی اعلی قیادت سر گرم عمل ہے اور ملزمان کو انصاف کے کٹہرے میں لانے میں رکاوٹ بن رہی ہے پولیس نے ملزم کی واپسی کے لئے انٹر پول سے رابطے کا فیصلہ کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق تین ماہ قبل تھانہ اگوکی کے علاقے مظفر پور کے ضلع ناظم اکمل چیمہ کے بھتیجے، سابق صوبائی وزیر چوہدری اجمل چیمہ کے بیٹے اور اٹک کے ضلعی ناظم میجر(ر) طاہر صادق کے داماد بلال چیمہ نے تین ہیجڑوں کے ساتھ عرصہ دراز تک بدفعلی کرکے ان کی ویڈیو بناکے محظوط ہوتا رہا ، ایک موقع پر بلال چیمہ ہیجڑوں سے بدفعلی کے بعد اپنا موبائل بھول گیا جسے واپس لینے کے لئے جب وہ واپس آیا تو ہیجڑوں نے موبائل دینے سے انکار کر دیا جس پر بلال چیمہ نے ثبوت مٹانے کے لئے کلاشنکوف کی گولیاں مار کر تینوں ہیجڑوں کو قتل کر دیا جبکہ ایک عینی شاید شہزاد بچ گیا۔ جس سے تفتیش کے دوران ملزمان کی نشاندہی ہوئی جس کے بعد ملزم پر مقدمہ چلانے کے لئے بھر پور کوشش کی گئی لیکن سیاسی اثر رسوخ کے باعث ملزم کو گرفتار نہیں کیا جا سکا اور ملزم امریکہ بھاگ گیا پولیس نے ملزم بلال چیمہ کی واپسی کے لئے درخواست تیار کرلی ہے جسے جلد ہی انٹرپول کے حوالے کردیا جائے گا ۔ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر سیالکوٹ کیپٹن (ر) محمد امین وینس نے بتایا ہے کہ جائے وقوعہ سے ملزم بلال چیمہ کا اسی ہزار روپے مالیت کا موبائل فون برآمد ہوا جبکہ واقع کے ایک عینی شاہد شہزاد نے بھی ملزم بلال چیمہ کو شناخت کرلیا ہے اور مقامی عدالت میںملزم کونامز دکرنے کے حوالے سے بیان بھی ریکارڈ کروالیا ہے پولیس نے ملزم بلال چیمہ کے موبائل فون کا ڈیٹا بھی حاصل کرلیا ہے اور اس کے علاوہ ملزم کے موبائل فون سے فحش فلمیں بھی ملی ہیں جنہیں پولیس کی طرف سے جلد ہی منظر عام پر لائے جانے کا اعلان کیا گیا ہے ۔ ڈی پی او محمد امین نے بتایاکہ قتل ہونے والے ہیجڑوں کے ساتھ بدفعلی کی بھی تصدیق کر لی گئی ہے اس کے لئے میڈیکل رپورٹ کے علاوہ ڈی این اے ٹیسٹ بھی کرواکے رپورٹ حاصل کرلی گئی ہے اور مقدمہ کی فائل میں شامل کرلیا گیا ہے تاکہ ملزم سزا سے نہ بچ سکیں ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ملزم بلال چیمہ وقوعہ سے قبل کئی مرتبہ مقتول ہیجڑوں کے گھروں میں جا کر ان سے بدفعلی کرتا رہا ہے اور اس کے واضح ثبوت بھی ملے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ملزم بلال چیمہ کو شامل تفتیش کروانے کیلئے پولیس نے متعدد بار ضلع ناظم سیالکوٹ محمد اکمل چیمہ اور سابق صوبائی وزیر چودھری اجمل چیمہ سے رابطہ کیا لیکن انہوں نے ملزمان کو پیش کرنے کی بجائے انہیں امریکہ فرار کروادیا ہے لیکن پولیس افسران نے کہا کہ ملزم بلال چیمہ کو امریکہ سے گرفتار کرنے کیلئے انٹرپول سے رابطہ کیا جائے گااور اس کا ڈی این اے ٹیسٹ کروایا جائے گا ۔ قبل ازیں پولیس تھانہ اگوکی کے ایس ایچ او انسپکٹر رانازاہد حسین نے کہا تھا کہ ڈی این اے ٹیسٹ چیمہ فیملی کے پاکستان میں موجود کسی دوسرے فرد کا بھی کروایاجاسکتا ہے جس سے ساری حقیقت سامنے آجائے گی ۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ ملزم بلال چیمہ ہیجڑوں سے بدفعلی کے بعد اپنا موبائل فون موقعہ پر بھول گیا جب وہ موبائل فون لینے کیلئے واپس آیا تو ہیجڑوں اور بلال چیمہ کے درمیان جھگڑا ہو گیا جس پر ملزم نے کلاشنکوف سے فائرنگ کرکے تینوں ہیجڑوں کو قتل کردیا جبکہ ایک عینی شاہد شہزاد بچ گیا جس نے ملزم بلال چیمہ کو شناخت بھی کرلیا ہے اور تہرے قتل کا یہ مقدمہ اب واضح ہوگیا ہے ۔ واضح رہے کہ ملزم بلال چیمہ کی شادی چندسال قبل ضلع ناظم اٹک میجر (ر) طاہر صادق کی بیٹی کے ساتھ ہوئی تھی جوکہ چودھری شجاعت حسین اور مسلم لیگ (ق) پنجاب کے صدر چودھری پرویز الہی کی عزیزہ بھی ہے اور اس حوالے سے اس اہم ترین مقدمہ میں چودھری بردران کی خصوصی دلچسپی بھی دیکھنے کوملی ہے ۔ دریں اثناء مسلم لیگ (ق) کے حامی ضلع ناظم سیالکوٹ محمد اکمل چیمہ نے کہا ہے کہ تین ہیجڑوں کے قتل کے واقعہ سے ان کے خاندان کا کوئی تعلق ہے نہ ہی بلال چیمہ اس میں ملوث ہے تاہم پنجاب حکومت ان کی وفاداری تبدیل کروانے کیلئے انہیں ہراساں کررہی ہے اور بلال چیمہ کو اسی وجہ سے مقدمہ میں بے گناہ ملوث کیا گیا ہے حالانکہ ضلع سیالکوٹ کے عوام ان کے خاندان کے کردار اور خدمات سے آگاہ ہیں

Tags: , , , ,

اوپر والی خبر سے ملتی جلتی خبریں دیکھیں

Tags: Pakistan , Urdu , Urdu News