Urdu News

Urdu News…The 3rd Largest Online Urdu Newspaper

Urdu News header image 4

Entries Tagged as 'lahore'

لاہور کے موچی دروازے کے پلازہ سے بھڑکنے والی آگ پر آٹھ گھنٹے بعد بھی قابو نہیں پایا جاسکا

February 7th, 2011 · No Comments · شہر شہر کی خبریں

٭۔ ۔ ۔ آگ سے تین پلازے تباہ جبکہ مسجد اور مکان سمیت 11 عمارتیں متاثر ہوئیں کروڑوں روپے کا سامان جل کر راکھ ہوگیا
٭۔ ۔ ۔ تنگ جگہوں اور پلازوں کی بلندی کے باعث ریسکیو 1122، فائر بریگیڈ اور سول ایوی ایشن کی امدادی ٹیمیں آگ بجھانے میں کامیاب نہ ہوسکیں
٭۔ ۔ ۔ تاجر اپنی جلتی ہوئی دکانوں کو دیکھ کر دھاڑیں مار کر روتے اور مرد کو پکارتے رہے، 23 زخمیوں کو ہسپتال منتقل کردیا گیا، 3کی حالت نازک

لاہور ‘ موچی گیٹ لاہور کے اندر بحریہ سنٹر میں لگنے والی آگ پر آٹھ گھنٹے بعد بھی قابو نہ پایا جاسکا۔ آگ نے تین بڑے پلازوں اور مسجد سمیت 11 عمارتوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔ کروڑوں روپے کا سامان جل کر راکھ ہوگیا۔ جگہیں تنگ اور عمارتیں بہت بلند ہونے کے باعث ریسکیو 1122، فائر بریگیڈ اور سول ایوی ایشن کی امدادی ٹیمیں بے بس ہوگئیں۔ آگ سے جھلسنے والے 23 افراد کو میو ہسپتال پہنچادیا گیا۔ منہدم عمارتوں تلے دب کر متعدد افراد کی ہلاکتوں کا بھی خدشہ ہے۔ تفصیلات کے مطابق موچی گیٹ کے اندر بحریہ سنٹر کے ایک گودام میں سوموار کی صبح 8 بجے آگ بھڑک اٹھی جس کے بعد آگ نے پلازہ کی تمام دوکانوں کو لپیٹ میں لے لیا۔ آدھ گھنٹہ بعد فائر بریگیڈ اور ریسکیو 1122 کی امدادی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں لیکن گلیاں تنگ اور جائے وقوعہ کا فاصلہ زیادہ ہونے کے باعث امدادی ٹیمیں بے بسی کی تصویر بن گئیں۔ابتدائی طور پر پہنچنے والی دو فائر گیٹ کے ٹینکرز میں سے ایک میں پانی ہی نہیں تھا جبکہ دوسرے ٹینکر کا پانی متاثرہ پلازہ تک پہنچتے ہوئے راستے میں لیکج کے باعث ضائع ہوگیا۔ امدادی سرگرمیوں کے باعث محکمہ شہری دفاع کی ٹیموں کو بھی طلب کیا گیالیکن متاثرہ عمارتوں تک رسائی نہ ملنے اور آلات کی کمی کے باعث آگ پھیلتی چلی گئی اور اس نے ایک مسجد اور گھر سمیت 11 عمارتوں کو لپیٹ میں لے لیا۔ آگ سے تین پلازے مکمل تباہ جبکہ مسجد شہید ہوگئی۔ متاثرہ تین پلازوں کے کچھ حصے منہدم ہوگئے۔ 23 افراد آگ سے جھلس گئے جنہیں طبی امداد کیلئے میو ہسپتال پہنچایا گیا ان میں سے تین کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔ آگ لگنے کے بعد اپنی عمارتیں اور کروڑوں روپے کا سامان جلتا دیکھ کر تاجر دھاڑیں مار کر روتے اور حکمرانوں کو امداد کیلئے پکارتے رہے۔ گوداموں اور دکانوں میں پلاسٹک، کاسمیٹکس اور کیمیکلز کی موجودگی کے باعث چھوٹے چھوٹے دھماکوں کے ساتھ آگ مزید پھیلتی چلی گئی۔سہ پہر تین بجے کے قریب وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے بدین سے چیئرمین این ڈی این اے کو فون پر امدادی سرگرمیوں میں عاون کی ہدایت کی جبکہ اس کے بعد آرمی کے ہیلی کاپٹر بھی صورتحال کا جائزہ لینے پہنچ گئے۔ لوگ اپنی مدد آپ کے تحت پانی کی بالٹیاں آگ پر گراتے رہے لیکن کوئی کامیابی نہ ہوسکی۔ ریسکیو ٹیموں کے مطابق ان کے پاس اس قدر تنگ گلیوں اور اونچی عمارتوں میں آگ بجھانے کے آلات ہی نہیں ہیں، جائے حادثہ تک پہنچتے پانی کا پریشر ختم ہوجاتا ہے جس کے باعث آگ پر قابو پانا انتہائی مشکل ہے۔ سہ پہر چار بجے تک ریسکیو ٹیموں کو آگ بجھانے یا اسے کم کرنے میں کوئی کامیابی حاصل نہیں ہوسکی تھی۔

Tags:

جسٹس جاوید اقبال کے والدین کے قتل کے مقدمہ میں چھوٹے بھائی نوید اقبال کو گرفتار کر لیا گیا

January 18th, 2011 · No Comments · پاکستان


٭۔ ۔ ۔ نوید اقبال نے دوہرے قتل کا اعتراف کر لیا ۔ ترجمان پنجاب حکومت و پولیس ذرائع
٭۔ ۔ ۔ نوید اقبال کو مضبوط شہادت پر خاندان کے لوگوں کو اعتماد میں لے کر شامل تفتیش کیا، 24 گھنٹوں میں عدالت میں پیش کر دیا جائے گا ۔ رانا ثناء اللہ
لاہور ‘ سپریم کورٹ آف پاکستان کے سینئر جسٹس جاوید اقبال کے والدین کے قتل کے الزام میں جسٹس جاوید اقبال کے چھوٹے بھائی نوید اقبال کو گرفتار کر لیا گیا ۔ صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے نوید اقبال کی گرفتار ی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ملزم کو 24 گھنٹے کے اندر عدالت میں پیش کیا جائے گا جبکہ ترجمان پنجاب حکومت اور پولیس ذرائع کے مطابق نوید اقبال نے والدین کو قتل کرنے کااعتراف کر لیا ہے ۔ ملزم کو جائیداد کا مالک نہ ہونے پر رنج تھا۔ تفصیلات کے مطابق جسٹس جاوید اقبال کے والدین کو چند روز قبل ان کے بیڈ روم میں قتل کر دیا گیا تھا جس کی تحقیقات آئی جی پنجاب کی سربراہی میں پولیس کے سینئر افسران کی ٹیم کر رہی تھی ۔ تحقیقات کے مختلف پہلوؤں کا جائزہ لینے کے بعد گذشتہ شام جسٹس جاوید اقبال کے چھوٹے بھائی نوید اقبال کو گرفتار کر لیا گیا جبکہ پولیس ذرائع اس بات کی بھی تصدیق کر رہے ہیں کہ نوید اقبال نے والدین کو قتل کرنے کا اقرار کر لیا گیا ۔ صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ کے مطابق جسٹس جاوید اقبال کے والدین کا قتل انتہائی ہائی پروفائل کیس تھا جس کی بہت احتیاط سے تفتیش کی جا رہی ہے اس کیس سے دنیا میں پاکستان کی بہت سبکی بھی ہوئی ۔ انہوںنے کہا کہ مضبوط شہادت کے بغیر نوید اقبال کو شامل تفتیش کرنا ممکن نہیں تھا وہ فی الحال انہیں شامل تفتیش کر نے کا لفظ استعمال کر رہے ہیں ۔ رانا ثناء اللہ نے کہا کہ دوہرے قتل کی واردات کی تین چار پہلوؤں سے تحقیقات کی جا رہی تھیں جن میں ان کے رشتہ داروں، نوکروں کے علاوہ جسٹس جاوید اقبال کے پاس زیر سماعت حساس نوعیت کے مقدمات کو بھی سامنے رکھا جا رہا تھا ۔ انہوںنے کہا کہ شواہدات اس قدر مضبوط ہیں کہ ملزم کسی بھی صورت اپنے جرم سے انکار نہیں کر سکے گا ۔ انہوںنے کہا کہ نوید اقبال کو خاندان کے لوگوں کو اعتماد میں لینے کے بعد شامل تفتیش کیا گیا ہے اور اسے گرفتار ی ڈالنے کے بعد 24 گھنٹوں کے اندر عدالت میں پیش کر دیا جائے گا جبکہ کیس کی تفصیلات سے خود آئی جی پنجاب میڈیا کو بریف کریں گے ۔

Tags: ··

رمضان المبارک ‘ لاہور میں بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ ‘ عوام میں شدید اشتعال

August 12th, 2010 · 1 Comment · پاکستان

شہری علاقوں میں 12،نواحی علاقوں میں 16گھنٹے بجلی بند،تمام تجارتی اور عوامی امورٹھپ ہو کر رہ گئے
مساجد سمیت گھروں میں پانی ناپید،ماہ مقدس میں ریلیف فراہم نہ کرنے پر عوام میں شدید اشتعال پھیل گیا

لاہور ‘ رمضان المبارک میں بھی لاہور اور اس کے گردو نواح میں بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ جاری ہے ۔جس سے عوام میں حکومت کے خلاف شدید اشتعال پھیل رہا ہے ۔ اور لوگوں کی نفرت میں مزید اضافہ ہو رہا ہے۔ اطلاعات کے مطابق رمضان المبارک کے آغاز پر شہری علاقوں میں دورانیہ 10سے 12گھنٹوں تک جا پہنچا ہے جبکہ نواحی علاقوں میں14سے 16گھنٹے لوڈشیڈنگ سے تمام کاروباری اور عوامی امورٹھپ ہو کر رہ گئے ،مساجد سمیت گھروں میں پانی ناپید ،مقدس مہینے میں بھی ریلیف فراہم نہ کرنے پر عوام میں حکومت کے خلاف شدید اشتعال پھیل گیا ۔سحری کے وقت بھی لاہور شہر کے کئی علاقوں میں بجلی غائب رہی جس سے لوگ حکومت کو بددعائیں دیتے نظر آئے

Tags: ·

سروسز ہسپتال میں ملازمین کے مسائل حل کرنے کیلئے ون ونڈو پروگرام کا آغاز

August 1st, 2010 · No Comments · شہر شہر کی خبریں

اب ڈاکٹروں، نرسوں اور پیرا میڈیکل سٹاف کو دفتروں کے چکروں سے نجات مل جائے گی۔ ایم ایس
درخواست زیر التواء رکھنے کی اجازت نہیں دی جائے گی، تاخیر پر انتظامی ڈاکٹر ذمہ دار ہوگا۔ ڈاکٹر محمد جاوید

لاہوریکم اگست‘ سروسز ہسپتال میں مریضوں کی دن رات خدمت پر مامور ڈاکٹرز، نرسز و پیرا میڈیکل سٹاف کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کیلئے ون ونڈو پروگرام شروع کردیا گیا۔ میڈیکل سپریٹنڈنٹ ڈاکٹر محمد جاوید نے بتایا کہ ڈاکٹرز و دیگر ملازمین اسی صورت میں مریضوں کی بہتر انداز میں دیکھ بھال اور علاج معالجہ پر توجہ دے سکتے ہیں جب وہ خود دفتری مسائل میں الجھے ہوئے نہ ہوں۔ انہوں نے کہا کہ مریضوں کے علاج معالجہ پر یکسوئی توجہ دینے اور ہسپتال کے ماحول کو مزید خوشگوار بنانے کیلئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ اگر کسی ڈاکٹر، نرس یا اہلکار کو کوئی مسئلہ درپیش ہو تو وہ انتظامیہ کو تحریری طور پر آگاہ کرے جس پر انتظامی ڈاکٹر اس کو حل کرنے کیلئے فوری ایکشن لیں گے اور ہر درخواست پر کارروائی ایک ہفتہ کے ا ندر مکمل کر کے متعلقہ اہلکار کو آگاہ کیا جائے گا۔ اس سلسلے میں متعلقہ ملازم کو مختلف شعبوںمیں چکر کاٹنے کی بجائے ایک ہی جگہ پر درخواست جمع کروانی ہوگی۔ ڈاکٹر محمد جاوید نے واضح کہا کہ اس سلسلے میں کسی بھی قسم کی کوتاہی یا تاخیر پر متعلقہ انتظامی ڈاکٹر کو ذمہ دار ٹھہرایا جائے گا اور کسی بھی درخواست کو زیر التواء رکھنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ مسئلہ حل ہونے یا نہ ہونے دونوں صورتوں میں درخواست گزار کو 7 دن کے اندر صورتحال سے آگاہ کرنا لازم ہوگا۔

Tags: ·

پرائیوٹ سکیم کے تحت حج درخواستیں جمع کروانے کی آخری تاریخ 16 اگست ہے‘ ڈائریکٹر حج

July 25th, 2010 · No Comments · پاکستان

حج کاارادہ رکھنے والے صرف وزارت مذہبی امور کے رجسٹرڈ شدہ 610 گروپ آرگنائزرز کے پاس ہی درخواستیںجمع کرائیں

لاہور۔25جولائی(اے پی پی ، نیوز اردو ڈاٹ نیٹ) ڈائریکٹر حج ملک محمد سلیم نے کہا ہے کہ پرائیوٹ سکیم کے تحت حج درخواستیں جمع کروانے کی آخری تاریخ 16 اگست ہے‘ حج کاارادہ رکھنے والے فراڈ سے بچنے کے لئے صرف وزارت مذہبی امور کے رجسٹرڈ شدہ 610 گروپ آرگنائزرز کے پاس ہی درخواستیںجمع کرائیں ۔ انہیں اپنے گروپ کی ویب سائٹ بناکر تمام ضروری معلومات واضح طور پر مہیا کرنے کے علاوہ حکومت کے منظور شدہ ڈیزائن کے مطابق سائن بورڈ اور وزارت کا اجازت نامہ اپنے دفاتر میں نمایاں طور پر آویزاں کرنے کی ہدایت کی گئی ہے ۔ گروپ آرگنائزر کو رقم کی ادائیگی چیک یا بینک ڈرافٹ کی شکل میں کی جائے ۔کسی غیر متعلقہ شخص‘ سب ایجنٹ یا ادارے کے پاس حج کے واجبات ہر گز جمع نہ کرائے جائیں۔ ایسے افراد سے ہوشیار رہیں جو گروپ آرگنائزر کے نام پر رقم وصول کرکے رفو چکر ہو جاتے ہیں۔ کسی فرد کے نام چیک نہ کاٹیں‘تمام تفصیلات اچھی طرح سمجھنے کے بعد گروپ آرگنائزر یعنی رجسٹرڈکمپنی کے نام چیک کی صورت میں ہی ادائیگی کریں۔ ادائیگی کے بعد باقاعدہ رسید حاصل کریں جس پرگروپ آرگنائزر کے دستخظ اور مہر بھی ہو۔ گروپ آرگنائزر کا پتہ اور فون نمبر اپنے پاس نوٹ کرلیں تاکہ وقتاً فو قتاً معلومات حاصل کرتے رہیں۔ حج گروپ کے بارے میں مزید تسلی کے لئے اپنے قریبی حاجی کیمپ سے گروپ آرگنائزر کے بارے میں تصدیق کی جا سکتی ہے۔ گزشتہ روز پرائیوٹ حج سکیم کے بارے میں عازمین حج کو ضروری معلومات د یتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عازمین درخواست فارم اور رقم جمع کروانے سے قبل پیکج کی تفصیل معلوم کر لیں کہ ادا کی جانے والی رقم کے عوض انہیں کون کون سی سہولیات مہیا کی جائیں گی ۔ پیکیج کی تفصیل پر گروپ آرگنائزر کے دستخط اور مہر ہونا ضروری ہے ۔ یہ ضرور معلوم کر لیں کہ سعودی عرب میں قیام کی مدت کیا ہوگی ۔ رہائش گاہ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں حرم شریف سے کتنے فاصلے پر ہوگی‘ عزیز یہ کے علاقے میں یاعزیزیہ کے بغیر‘ (عزیز یہ مکہ مکرمہ میں حرم شریف سے کافی فاصلے پر واقع ہے۔ گروپ آرگنائزر چند روز عزیز یہ میں قیام کے بعد حجاج کرام کو حج سے پہلے یا حج کے بعد حرم شریف کے قریب ہوٹل یا عمارت میں منتقل کر دیتے ہیں) یہ تفصیل جاننا بے حد ضروری ہے ۔ بعض گروپ آرگنائزر پیکیج میں کھانا بھی شامل کرتے ہیں ۔ عازمین کو معلوم ہونا چاہیے کہ پیکیج میں کھانا مکمل قیا م کے لئے ہوگا یاصرف منٰی کے پانچ ایام کے لئے ہوگا ۔اس کے علاوہ یہ بھی معلوم کر لیں کہ جہاز کا کرایہ کتنا ہوگا‘روانگی کے لئے ایئر لائن کی بکنگ براہ راست مدینہ منورہ کے لئے ہوگی یا جدہ کے لئے ہوگی۔ وطن واپسی کہاں سے ہوگی۔ منیٰ میں مکتب (معلم کے خیموں کا کیمپ)کون سا ہوگا۔جو مکتب جمرات یعنی شیطان کے قریب ہوتے ہیں وہ نسبتاً مہنگے ہوتے ہیں۔بعض گروپ آرگنائزر اپنے گروپ کے حجاج کو تحفے کے طور پر احرام، عبایا، سوٹ کیس ، دستی بیک وغیرہ میں سے کوئی چیز روانگی کے وقت دیتے ہیں۔ یہ معلومات بھی پہلے سے حاصل کرلیں تاکہ یہ اشیا آپ بازار سے نہ خریدیں۔ ٹرانسپورٹ کی نوعیت کیا ہوگی خصوصاً مشا عر یعنی منیٰ ، عرفات ، مزدلفہ کے لئے ٹرانسپورٹ کا انتظام کیا ہوگا۔ مدینہ منورہ جانے کے لئے معلم کی فراہم کردہ بس ہوگی یا پھر خصوصی بندوبست کے تحت پرائیوٹ کو سٹر وغیرہ فراہم کی جائیگی۔پیکیج قبول کرنے کی صورت میں پیکج کی تفصیل پر خود بھی دستخط کریںاور گروپ آرگنائزر سے بھی دستخط کرائیں۔گروپ آرگنائزر سے روانگی اور واپسی کی متوقع تاریخوں کے بارے میں بھی معلوم کرلیں ۔

Tags: ·

ایم ایس سی فزکس‘ پارٹ ون سالانہ امتحان 2010ء کا تیسرا پرچہ 2 اگست کو دوبارہ منعقد ہو گا

July 25th, 2010 · No Comments · تعلیم و تربیت, پاکستان

لاہور۔25جولائی(اے پی پی ، نیوز اردو ڈاٹ نیٹ) پنجاب یونیورسٹی شعبہ امتحانات کے زیر اہتمام منعقدہ ایم اے/ ایم یاس سی پارٹ ون سالانہ امتحان 2010ء میں شرکت کرنیوالے ایم ایس سی فزکس کے امیداوار کا تیسرا پرچہ (کوانٹم مکینکس) 2 اگست کو صبح 9 تا 12 بجے دوبارہ ہو گا جبکہ ان کا 30 جون کو لیا جانیوالا مذکورہ پرچہ منسوخ تصور کیا جائیگا۔ اس ضمن میں نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا ہے۔

Tags: ··

جعلی ڈگری کے حق میں نہیں لیکن اس معاملہ کو بڑھا چڑھا کر پیش نہیں کیا جانا چاہئے ‘ وزیراعظم یوسف رضا گیلانی

July 24th, 2010 · No Comments · پاکستان

افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کے حوالے سے پارلیمنٹ کو اعتماد میں لینے کیلئے وزیر خارجہ ‘وزیر تجارت اور وزیرخزانہ پر مشتمل کمیٹی قائم کر دی گئی ہے، موجودہ جمہوری دور میں میڈیا پر ہر گز پابندی نہیں لگائی جا سکتی ، جعلی ڈگری کے معاملہ کو بڑھا چڑھا کر پیش نہیںکیا جا نا چاہئے، متعلقہ اداروں کو رمضان المبارک سے قبل چینی کی کمی کو پورا کرنے کی ہدایت کر دی ہے۔ وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کی جنرل ہسپتال میں مسلم لیگ( ن )کے رہنما جاوید ہاشمی کی عیادت کے بعد میڈیا سے گفتگو

لاہور۔24 جولائی (اے پی پی ، نیوز اردو ڈاٹ نیٹ ) وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کے حوالے سے پارلیمنٹ کو اعتماد میں لینے کی غرض سے وزیر خارجہ ‘وزیر تجارت اور وزیرخزانہ پر مشتمل کمیٹی قائم کر دی گئی ہے تاہم دہشتگردی کا مسئلہ ہو یا کوئی اور معاملہ حکومت ملک و قوم کے وسیع تر مفاد میں تمام فیصلے کرے گی ،موجودہ جمہوری دور میں میڈیا پر ہر گز پابندی نہیں لگائی جا سکتی ،چیف آف آرمی سٹاف کی مدت ملازمت میں توسیع انتظامی معاملہ ہے جس پر تبصرہ نہیں کیا جا سکتا‘جعلی ڈگری کے حق میں نہیں لیکن اس معاملہ کو بڑھا چڑھا کر پیش نہیں کیا جا نا چاہئے ،چینی کی کمی کو پورا کرنے کیلئے متعلقہ اداروں کو ہدایت کردی گئی ہے کہ وہ رمضان المبارک سے قبل چینی کی کمی کو پورا کریں بصورت دیگر ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔وہ ہفتہ کے روز جنرل ہسپتال لاہور میں مسلم لیگ( ن )کے رہنما جاوید ہاشمی کی عیادت کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پر وفاقی وزیر ٹیکسٹائل انڈسٹری فاروق سعید خان ‘معروف صحافی مجیب الرحمان شامی سمیت دیگر اعلی حکام بھی موجود تھے ۔
وزیر اعظم نے میڈیا کے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کے خاتمے کے حوالے سے قانون نافذ کر نے والے اداروں اور وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک کو ہدایت کی گئی ہے کہ سیکورٹی کے موثر اقدامات کو یقینی بنایاجائے اور اس سلسلہ میں سندھ حکومت تمام متعلقہ اداروں اور سیاسی جماعتوں سے مل کر حکمت عملی تشکیل دے کیونکہ 18شہروں کے برابر اتنا بڑا شہر ہونے کی وجہ سے شہر کراچی کی فول پروف سیکورٹی آسان نہیں۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف کی طرف سے یہ الزام غلط ہے کہ وزیر داخلہ کے کہنے پر قانون نافذ کرنے والے ادارے پنجاب حکومت کے ساتھ تعاون نہیں کر رہے ۔انہوں نے کہا کہ ایسا ہر گز نہیں جبکہ تمام ادارے رحمان ملک کے ماتحت بھی نہیں ۔ایک سوال کے جواب میں وزیر اعظم نے کہا کہ موجودہ حکومت کے دور میں میڈیا پر ہر گز پابندی نہیں لگائی جاسکتی کیونکہ میرا خود میڈیا سے تعلق ہے اور ہم نے پرویز مشرف کے دور کے 3 نومبر کے اقدامات اور میڈیا پر قدغنیں لگانے کے خلاف احتجاجی جلوس اور ریلیاں نکالیں جس پر ہمیں بھی دہشت گرد کہا گیا۔
انہوں نے کہا کہ میڈیا نے جمہوریت کی بحالی کے لئے بہت جدجہد کی ہے لہذا موجودہ جمہوری دور میں میڈیا پر پابندی نہیں لگ سکتی۔وزیر اعظم نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ چیف آف آرمی سٹاف کی مدت ملازمت میں توسیع انتظامی معاملہ ہے تاہم اس پر تبصرہ نہیں کیا جاسکتا۔ایک سوال کے جواب میں وزیر اعظم نے کہاکہ ایچ ای سی کے چیئرمین کی ان سے کوئی ملاقات نہیں ہو ئی جبکہ گزشتہ روز محکمہ تعلیم کے افسران کی ان سے ہونیوالی ملاقات کا جعلی ڈگریوں سے کوئی تعلق نہیں۔انہوں نے کہا کہ جعلی ڈگریوں کا معاملہ اب الیکشن کمیشن میں جا چکا ہے۔ایک سوال کے جواب میں سید یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ رچرڈ ہالبروک کی پاکستان آمد کے سلسلہ میں ہم کسی کی خواہشات کی تکمیل نہیں کر رہے ۔
انہوں نے کہا کہ یہ تاثر بالکل غلط ہے جبکہ موجودہ حکومت پاکستان کے وسیع تر مفاد میں تمام تر فیصلے کرے گی۔افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت کوئی غلط کام نہیں کر رہی بلکہ اس سلسلہ میں وزیر خارجہ ‘وزیر تجارت اور وزیر خزانہ پر مشتمل کمیٹی قائم کر دی گئی ہے جو اس معاملہ کا جائزہ لے گی اور پارلیمنٹ کو اعتماد میں لے گی۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ حکومت بلوچستان کی ترقی پر خصوصی توجہ دے رہی ہے جبکہ وہاں ابھی بہت کام کرنا باقی ہے۔ملک میں چینی کی کمی کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں وزیر اعظم نے کہا کہ اس سلسلہ میں متعلقہ اداروں کو ہدایت کر دی گئی ہے کہ رمضان المبارک سے قبل چینی کی کمی کوپورا کیا جائے بصورت دیگر متعلقہ اداروں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔قبل ازیں وزیر اعظم نے مسلم لیگ (ن )کے رہنما جاوید ہاشمی کی عیادت کی اور ان کی خیریت دریافت کی ۔وزیر اعظم نے جاوید ہاشمی کو پھولوں کا گلدستہ پیش کیا اور دعا کی کہ اللہ تعالی انہیں جلد صحت یاب کر ے۔وزیر اعظم نے ہسپتال انتظامیہ کو بھی ہدایت کی کہ جاوید ہاشمی کو بہترین طبی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔

Tags: ···

پاک بھارت انڈس واٹر کمشن کا دو روزہ اجلاس ختم ہو گیا‘جماعت علی شاہ

July 23rd, 2010 · No Comments · پاکستان

اجلاس میںٹیلی میٹری سسٹم کی تنصیب ‘دریاؤں اور نالوں میں آلودگی کے خاتمے ‘ دریاؤں پر دونوں اطراف کنسٹرکشن‘ کمیشن کے کردار کو مضبوط بنانے اور پاکستان کی طرف سے بھارت کو بھیجے گئے خطوط کا جواب نہ آنے کے حوالے سے پانچ ایجنڈا آئٹمز پر بات چیت کی گئی ۔ انڈس واٹر کمشنر جماعت علی شاہ کی میڈیا سے گفتگو
ہم نے کمشن کو اس طرح موثر و مضبوط بنانا ہے کہ غیر جانبدار ماہرین اور ثالثی عدالت کی ضرورت باقی نہ رہے اور ہم حکومتوں سے مل کر باہمی رضامندی کے ساتھ دو طرفہ مذاکرات کے ذریعے ایشوز کا حل نکال سکیں۔ اورنگا ناتھن
لاہور۔23 جولائی (اے پی پی ، نیوز اردو ڈاٹ نیٹ)پاک بھارت انڈس واٹر کمشن کا 106واںاجلاس جمعہ کے روز لاہور میں اختتام پذیر ہو گیا ۔اجلاس میں بھارت کے وفد کی قیادت انڈس واٹر کمشنر اورنگا ناتھن نے کی جبکہ پاکستانی وفد کی قیادت انڈس واٹر کمشنر سید جماعت علی شاہ کر رہے تھے ، پاکستانی وفد میں محکمہ آبپاشی‘ نیسپاک اور واپڈا کے نمائندے بھی شریک تھے۔دو روزہ اجلاس کے دوران ٹیلی میٹری سسٹم کی تنصیب ‘دریاؤں اور نالوں میں آلودگی کے خاتمے ‘ دریاؤں پر دونوں اطراف کنسٹرکشن‘ کمیشن کے کردار کو موثر و مضبوط بنانے اور پاکستان کی طرف سے بھارت کو بھیجے گئے خطوط کا جواب نہ آنے کے حوالے سے متعلق پانچ ایجنڈا آئٹمز پر بات چیت کی گئی۔ اجلاس کے دوران دونوں ممالک نے متنازعہ امور پر اپنے اپنے تحفظات سے ایک دوسرے کو آگاہ کیا جبکہ دونوں ممالک کی طرف سے بعض امور پر اتفاق بھی کیا گیا ۔اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے انڈس واٹر کمشنر پاکستان سید جماعت علی شاہ نے کہا کہ اجلاس میں پانچ ایجنڈا آئٹمز پر بات چیت ہوئی جس میں ٹیلی میٹری سسٹم کی تنصیب سرفہرست تھی ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ ہم پانی کے بہاؤ کے حوالے سے روزانہ کی بنیادوں پر حقیقی ٹائم ڈیٹا حاصل کریں جبکہ ہماری اس تجویز کو بھارت کی طرف سے بھی سراہا گیا ہے تاہم اس حوالے سے آئندہ میٹنگز میں مزید بات چیت ہو گی ۔ سید جماعت علی شاہ نے کہا کہ اجلاس میں ہڈیارہ‘ قصور ڈرینز اور دریائے جہلم میں آلودگی کے حوالے سے بات چیت کی گئی ہے جبکہ سندھ طاس معاہدہ کے تحت دریاؤں میں آلودگی کی ہرگز اجازت نہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلہ میں اقدامات کی غرض سے بھارت کے ساتھ خط و کتابت کی گئی ہے اور اجلاس میں یہ بات طے پائی ہے کہ ہڈیارہ ‘ قصور ڈرینز اور دریائے جہلم کی مشترکہ انسپکشن کی جائے گی۔ تاہم اس کا شیڈول بھارت کے ساتھ خط و کتابت کے ذریعے طے کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ اجلاس میں دریاؤں پر دونوں اطراف کنسٹرکشن کے حوالے سے بھی بات چیت کی گئی ہے جبکہ اس سلسلہ میں انسپکشن کی غرض سے بھارت کو تجویز دی گئی ہے جس کی تاریخ کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔ سید جماعت علی شاہ نے کہا کہ اجلاس میں کمیشن کاکردار مضبوط بنانے کے حوالے سے بھی تبادلہ خیال کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ تاثر عام پایا جاتا ہے کمشن کا کام ایشو کو حل کرنا ہے تاہم میں سمجھتا ہوں کہ دنیا میں بھی ایسے کمشن کام کر رہے ہیں ہمیں ان سے سبق سیکھنا چاہئے جبکہ حکومت کو چاہئے کہ وہ اس سلسلہ میں باڈی تشکیل دے ۔
انہوں نے کہا کہ سندھ طاس کمشن کے آئندہ اجلاس میں اصلاحات لانے کی غرض سے مزید اقدامات کے لئے بات چیت ہو گی ۔ سید جماعت علی شاہ نے کہا کہ اجلاس میں پاکستان کی طرف سے بھیجے گئے خطوط کا جواب نہ دیئے جانے کے حوالے سے بھی بات چیت کی گئی ہے تاہم اس سلسلہ میں معنی خیز بات چیت کے لئے آئندہ اجلاس میں مزید گفتگو کی جائے گی۔ صحافیوں کے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ رواں سال مئی میں ہونے والی کمشن کی میٹنگز میں یہ فیصلہ کیا گیا تھا کہ انڈس ریور پر زیر تعمیر دو پراجیکٹس کی انسپکشن کی جائے گی جبکہ اس سلسلہ میں آئندہ ماہ شیڈول طے کیا جائے گا۔
ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ایک ہی وقت میں تمام دریاؤں کی انسپکشن نہیں ہو سکتی اور معاہدہ کے مطابق یہ انسپکشن پانچ سال میں کرنا ہوتی ہے تاہم چوتھے مرحلے میں انڈس ریور سسٹم پر یہ پہلی انسپکشن ہو گی جو نہایت ا ہمیت کی حامل ہے ۔جماعت علی شاہ نے کہا کہ بھارتی سائیڈ پر ہم نے کوئی ایسا بیراج نہیں دیکھا جہاں پر واٹر سٹوریج ہو سکے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی طرف ایسا کوئی پراجیکٹ نہیں جس سے وہاں پانی روکا جا سکے۔ بھارٹی انڈس واٹر کمشنر اورنگا ناتھن نے کہا کہ بھارت سندھ طاس معاہدہ پر مکمل عمل درآمد کر رہا ہے جبکہ ہمارے پاس کوئی ایسا طریقہ نہیں جس سے ہم واٹر سٹوریج کر سکیں۔ انہوں نے اس تاثر کو رد کر دیا جس میں پاکستان کی طرف سے کہا گیا کہ بھارت زرعی استعمال کے لئے پاکستان کے حصے کا پانی حاصل کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ میٹنگز میں مکمل تعاون کے ساتھ تمام ایشوز پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے جس کا ثبوت یہ ہے کہ گذشتہ اجلاس میں زیر بحث معاملات حالیہ میٹنگ میںڈسکس نہیں کئے گئے بلکہ مزید ایشوز پر بات چیت کی گئی۔ اورنگا ناتھن نے کہا کہ ہم نے کمشن کو اس طرح مضبوط بنانا ہے کہ غیر جانبدار ماہرین اور ثالثی عدالت کی ضرورت باقی نہ رہے اور ہم حکومتوں سے مل باہمی رضا مندی کے ساتھ دو طرفہ مذاکرات کے ذریعے ایشوز کا حل نکال سکیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی طرف سے مختلف ایشوز پر کئی خطوط ملے ہیں جبکہ ان ایشوز کے سٹیٹس کے حوالے سے اجلاس میں بات چیت کی گئی ہے تاہم مزید بات چیت آئندہ میٹنگز میں متعلقہ حکام سے مشاورت کے بعد ہو گی۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ایشوز پر اختلافات معمول کا حصہ ہیں تاہم معاہدے کے میگنیزم کے مطابق ہمیں ایشوز کا مذاکرات کے ذریعے حل نکالنا چاہئے ۔اورنگا ناتھن نے کہا یہ تاثر بالکل غلط ہے کہ تمام ایشوز کو ٹائم فریم کے مطابق حل نہیں کیا جاتا تاہم میں اس بات پر یقین رکھتا ہوں کہ اگر ہم چاہیں تو ہم ایشوز کو کمشن لیول پر دو طرفہ مذاکرات کے ذریعے حل کر سکتے ہیں۔

Tags: ·

میرا نے ویلفیئر ٹرسٹ کیلئے لاہور اور اسلام آباد میں جگہ کی تلاش شروع کردی

July 23rd, 2010 · 2 Comments · پاکستان

لاہور۔23 جولائی (اے پی پی ، نیوز اردو ڈاٹ نیٹ) اداکارہ میرا نے اپنے ویلفیئرٹرسٹ کیلئے لاہور اور اسلام آباد جگہ کی تلاش شروع کردی ہے ۔جہاں پر میرا بے سہارا خواتین کیلئے ہاسٹل قائم کرنا چاہتی ہیں ۔میرا ان دنوں بے سہارا خواتین کیلئے کام کررہی ہیں

Tags: ··

مکان کی چھت گرنے سے پورا خاندان ملبے تلے دب گیا دو کمسن بچے جاں بحق

July 23rd, 2010 · No Comments · پاکستان

لاہور۔23 جولائی (اے پی پی ، نیوز اردو ڈاٹ نیٹ) شاہدرہ ٹاؤن کے علاقہ پنڈی قبرستان کے قریب مکان کی چھت گرنے سے پورا خاندان ملبے تلے دب گیادو کمسن بچے جاں بحق ہو گئے۔ ریسکیو 1122 کے مطابق ظہیر عباس رکشہ ڈرائیور اپنی بیوی سحر اور بچوں کے ہمراہ سو رہا تھا کہ علی الصبح مکان کی چھت گرنے سے پورا خاندان ملبے تلے دب گیا جس سے 3 سالہ رجب اور ایک سالہ سحر ہسپتال جاتے ہوئے دم توڑ گئے جبکہ ڈاکٹروں نے ظہیر عباس اور اس کی بیوی سحر کو طبی امداد دینے کے بعد ہسپتال سے فارغ کر دیا ہے۔

Tags: ·